Thursday , June 21 2018
Home / ہندوستان / ’’کشمیر میں راحت اور باز آباد کاری مرحلہ وار طور پر انجام دی جائے گی‘‘

’’کشمیر میں راحت اور باز آباد کاری مرحلہ وار طور پر انجام دی جائے گی‘‘

جموں ۔/16ستمبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) اب جبکہ جموں وکشمیر میں بارش اور سیلاب کی تباہ کاریوں کے بعد حالات آہستہ آہستہ معمول پر آرہے ہیں اور راحت و بچاؤ کاری میں شدت پیدا ہوچکی ہے، ریلوے خدمات جزوی طور پر بحال ہوگئی ہیں۔ لہذا راجوری اور پونچھ اضلاع میں سیلاب کی تازہ ترین صورتحال کا جائزہ لینے کے بعد وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے کہا کہ ریاستی حک

جموں ۔/16ستمبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) اب جبکہ جموں وکشمیر میں بارش اور سیلاب کی تباہ کاریوں کے بعد حالات آہستہ آہستہ معمول پر آرہے ہیں اور راحت و بچاؤ کاری میں شدت پیدا ہوچکی ہے، ریلوے خدمات جزوی طور پر بحال ہوگئی ہیں۔ لہذا راجوری اور پونچھ اضلاع میں سیلاب کی تازہ ترین صورتحال کا جائزہ لینے کے بعد وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے کہا کہ ریاستی حکومت راحت اور بازآبادکاری مرحلہ وار طور پر انجام دے گی کیونکہ نقصانات اتنے شدید ہیں کہ زندگی کو معمول پر لانے کیلئے کافی وقت لگ جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اس آفت سماوی نے ایسا سبق سکھایا ہے جسے ہم کبھی فراموش نہیں کرسکتے۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ صبر و تحمل کے ساتھ مرحلہ وار طور پر ہمیں اپنی زندگی دوبارہ شروع کرنا ہے۔ وزیر اعلیٰ کے ہمراہ ریاستی وزیر داخلہ سجاد احمد کچلو بھی تھے

جہاں انہوں نے تحصیل سورن کوٹ اور حویلی میں سیلاب کی تازہ ترین صورتحال کا جائزہ لیا جبکہ دریائے پونچھ کا انہوں نے فضائی معائنہ کیا جہاں شدید بارش اور سیلاب نے کافی تباہی مچائی۔ عمرعبداللہ نے اس دوران ڈاک بنگلہ میں ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ متاثرہ افراد کو معاوضے دیئے جائیں گے۔ عمر عبداللہ نے شیر کشمیر پُل جو سیلاب میں شدید طور پر متاثر ہوا، کا بھی معائنہ کیا اور وہاں سے متصل ابادی شنکر نگر کا بھی دورہ کیا جو سیلاب میں بہہ چکا ہے۔ انہوں نے وہاں موجود بچ جانے والے افراد کو تیقن دیا کہ مرکزی اور ریاستی حکومت دونوں کی جانب سے معاوضے ادا کئے جائیں گے اور راحت کاری کا سلسلہ بھی جاری رہے گا۔ گوجر اور بکیروال ہاسٹل میں موجود ریلیف کیمپوں کا بھی انہوں نے دورہ کیا اور وہاں عوام سے ملاقات کرتے ہوئے ان کی خیر و عافیت دریافت کی۔

انہوں نے ڈی ڈی سی کو ہدایت کی کہ تمام متاثرہ افراد کو غذا، ادویات، بلانکٹس اور دیگر ضرورت کی اشیاء وافر مقدار میں سربراہ کی جائے۔پونچھ ڈسٹرکٹ میں انہوں نے ڈسٹرکٹ افسران کے ایک اجلاس کی بھی صدارت کی جس کے دوران ڈسٹرکٹ ڈیولپمنٹ کمشنر ایم ایم ملک نے انہیں یہ بتاکر حیران کردیا کہ سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں کم و بیش 26افراد ہلاک اور 65افراد زخمی ہوئے ہیں۔ انہیں یہ بھی بتایا گیا کہ اب تک مختلف علاقوں سے 20نعشیں دستیاب ہوئی ہیں۔ عمر عبداللہ نے تمام ڈسٹرکٹ لیجسلیچرس کو خصوصی ہدایت کی کہ وہ متاثرہ عوام کی مشکلات کے لمحات میں ان کی دلجوئی اور مدد کیلئے ہمیشہ دستیاب رہیں۔ راجوری ڈسٹرکٹ میں عمر عبداللہ نے نوشیرہ میں حادثہ کے مہلوکین کے ارکان خاندان سے بھی ملاقات کی اور انہیں پرسہ دیا۔

TOPPOPULARRECENT