Saturday , September 22 2018
Home / شہر کی خبریں / ’’کون ہے جو ریاست کو تقسیم کرسکتا ہے؟‘‘ جگن کا چیلنج

’’کون ہے جو ریاست کو تقسیم کرسکتا ہے؟‘‘ جگن کا چیلنج

کڑپہ۔ 2؍فروری (این ایس ایس)۔ وائی ایس آر کانگریس پارٹی کے صدر جگن موہن ریڈی نے آندھرا پردیش کی تقسیم کے خلاف آج کھلے عام چیلنج کیا اور کہا کہ ’’ہم دیکھیں گے کہ آخر کون ہے جو ریاست کو تقسیم کرسکتا ہے؟‘‘ مسٹر جگن موہن ریڈی نے ایڈوپولاپایا میں اپنی پارٹی کے کھلے اجلاس میں صدر منتخب کئے جانے کے بعد خطاب کرتے ہوئے تلنگانہ اور سیما۔

کڑپہ۔ 2؍فروری (این ایس ایس)۔ وائی ایس آر کانگریس پارٹی کے صدر جگن موہن ریڈی نے آندھرا پردیش کی تقسیم کے خلاف آج کھلے عام چیلنج کیا اور کہا کہ ’’ہم دیکھیں گے کہ آخر کون ہے جو ریاست کو تقسیم کرسکتا ہے؟‘‘ مسٹر جگن موہن ریڈی نے ایڈوپولاپایا میں اپنی پارٹی کے کھلے اجلاس میں صدر منتخب کئے جانے کے بعد خطاب کرتے ہوئے تلنگانہ اور سیما۔ آندھرا کے عوام کو بخوشی ایک ساتھ رہنا چاہئے۔ آنجہانی وائی ایس راج شیکھر ریڈی نے تلنگانہ کے لئے جو کام کئے ہیں، وہ کسی دوسرے چیف منسٹر نے نہیں کیا۔ مسٹر جگن موہن ریڈی نے کانگریسی صدر سونیا گاندھی پر ریاست کی تقسیم کا الزام عائد کیا

اور کہا کہ چیف منسٹر این کرن کمار ریڈی اور اپوزیشن لیڈر این چندرابابو نائیڈو، سونیا گاندھی کے اشاروں پر کام کررہے ہیں۔ جگن نے چندرابابو نائیڈو کا مذاق اُڑاتے ہوئے کہا کہ اسمبلی میں تلگودیشم قائد ڈرامہ کررہے ہیں۔ جب وہ اپنا دایاں ہاتھ اُٹھاتے ہیں تو علاقہ سیما۔ آندھرا سے تعلق رکھنے والے ارکان اسمبلی اپنی نشستوں سے اُٹھ کھڑے ہوتے ہیں اور جب وہ (چندرابابو نائیڈو) اپنا بایاں ہاتھ اُٹھاتے ہیں تو تلنگانہ سے تعلق رکھنے والے ارکان اسمبلی اپنی نشستوں سے اُٹھ کھڑے ہوتے ہیں اور ہنگامہ آرائی کرتے ہیں۔ جگن نے سوال کیا کہ ’’یہ بھی کوئی سیاست ہے؟‘‘

TOPPOPULARRECENT