Friday , September 21 2018
Home / کھیل کی خبریں / ’’کیا ہم بھوک مٹانے کے لئے فٹبال کھائیں؟‘‘

’’کیا ہم بھوک مٹانے کے لئے فٹبال کھائیں؟‘‘

برازیل حکومت سے احتجاج کرنے والے ملازمین کا استفسار

برازیل حکومت سے احتجاج کرنے والے ملازمین کا استفسار
ساؤپاؤلو۔ 10؍جون (سیاست ڈاٹ کام)۔ برازیل میں فٹبال ورلڈ کپ شروع ہونے سے عین قبل ساؤپاؤلو میں میٹرو کے کارکنوں نے مظاہرے کئے ہیں۔ یہ وہی مقام ہے جہاں کل ٹورنمنٹ کا پہلا میچ کھیلا جانے والا ہے۔ میٹرو ملازمین نے گزشتہ جمعرات سے ہڑتال کر رکھی ہے جس سے ساؤپاؤلو میں پبلک ٹرانسپورٹ کا نظام درہم برہم ہو کر رہ گیا ہے۔ میٹرو کارکن اپنی تنخواہوں میں 12 فیصد اضافہ کا مطالبہ کرتے ہوئے ہڑتال کررہے ہیں۔ پولیس نے ان مظاہرین پر ٹوٹ پڑی، انہیں منشتر کرنے کے لئے لاٹھی چارج، آنسو گیس اور اعصاب شل کردینے والے شیلز کا بے دریغ استعمال کیا گیا۔ اس دوران جھڑپیں بھی ہوئیں، پولیس نے ایک درجن سے زائد مظاہرین کو حراست لے لیا ہے۔

اس ضمن میں ملازمین کے یونین لیڈر نے کہا ہے کہ ہم فٹبال سے محبت کرتے ہیں اور اس میگا ایونٹ میں ٹیم کی حمایت کرنے کیلئے بھرپور تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا مقصد ٹورنمنٹ کو روکنا نہیں ہے، اگر حکومت ہمارے مطالبات ماننے اورمذاکرات کیلئے سنجیدہ ہیں تو ہم مذاکرات کیلئے تیار ہیں۔ لیکن جب تک ہمارے مطالبات پورے نہیں ہوجاتے ہم اپنے موقف سے نہیں ہٹیں گے اور دوبارہ ہڑتال کریں گے۔ دوسری جانب عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ ملک میں بے روزگاری ہے، مہنگائی عروج پر ہے لیکن حکومت کا ورلڈ کپ کی فکر ہے۔ اس نے تمام وسائل اس ٹورنمنٹ پر جھونک دیئے ہیں، کیا ہم اپنی بھوک مٹانے کے لئے فٹبال کھائیں؟ ساؤپالو کے ٹرانسپورٹ سکرٹری جوراندی فریننڈو نے کہا کہ ہڑتال میں شامل 60 فیصد ملازمین کو ملازمتوں سے بے دخل کیا جاچکا ہے، کیونکہ ان کے مطالبات کو پورا کرنا حکومت کیلئے مشکل ہے۔

TOPPOPULARRECENT