Monday , June 18 2018
Home / ہندوستان / ’ صاحب! میں تھک چکا ہوں‘آسارام عدالت میں اشکبار

’ صاحب! میں تھک چکا ہوں‘آسارام عدالت میں اشکبار

جودھپور۔/14فبروری، ( سیاست ڈاٹ کام ) خود ساختہ سوامی آسارام جن پر نابالغ لڑکی کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے کا الزام ہے نے آج عدالت میں اپنے آپ کو بے قصور بتایا۔ ذرائع کے مطابق عدالت نے آسارام سے جب ان کے والد کا نام پوچھا تو انہوں نے کہا کہ اب وہ اس دنیا میں نہیں ہیں۔ اس کے علاوہ جب ان سے عمر کی بات پوچھی گئی تو اس پر بھی انہوں نے کوئی جو

جودھپور۔/14فبروری، ( سیاست ڈاٹ کام ) خود ساختہ سوامی آسارام جن پر نابالغ لڑکی کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے کا الزام ہے نے آج عدالت میں اپنے آپ کو بے قصور بتایا۔ ذرائع کے مطابق عدالت نے آسارام سے جب ان کے والد کا نام پوچھا تو انہوں نے کہا کہ اب وہ اس دنیا میں نہیں ہیں۔ اس کے علاوہ جب ان سے عمر کی بات پوچھی گئی تو اس پر بھی انہوں نے کوئی جواب نہیں دیا۔ قبل ازیں عدالت پہونچتے ہی آسارام نے جج سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ ’’صاحب! میرا یہ آخری سلام ہوسکتا ہے، میں اب یہاں آتے آتے تھک چکا ہوں‘‘آسارام کے ساتھ دیگر پانچ ملزمین نے الزامات کو سرے سے مسترد کرتے ہوئے ٹرائیل کا مطالبہ کیا ہے۔تفصیلات کے مطابق جج منوج کمار ویاس نے اگلی سماعت 17فبروری تک ملتوی کردی ہے تاہم عدالت میں الزامات سننے کے بعد آسارام عدالت میں ہی اُداس ہوگئے اور ان کی آنکھوں سے آنسو نکل پڑے۔ تاہم جیل سے واپسی کے دوران بس میں سوار ہوتے وقت انہوں نے لوگوں سے کہا کہ سب کچھ ٹھیک ہوجائے گا۔دریں اثناء آسارام کے وکیل نے عدالت میں درخواست داخل کرکے دہلی پولیس کے ذریعہ درج کئے گئے متاثرہ لڑکی کا بیان فراہم کرنے کی اپیل کی ہے۔واضح رہے کہ اس معاملہ میں جمعرات کو اس معاملہ کے ملزمین شرد چندر، شیوا، شلپی، پرکاش کو سیشن کورٹ جج(جودھپور ڈسٹرکٹ ) منوج کمار نے الزامات وضع کئے۔جمعرات کو ہی دوپہر عدالت میں آسارام سمیت دیگر تین ملزمین کو جیل سے پیش کیا گیا جبکہ شیوا اور شلپی جو چہارشنبہ کی رات ضمانت پر جیل سے رہا ہوئے تھے اپنے حامیوں کے ساتھ عدالت پہونچے تھے۔

TOPPOPULARRECENT