Tuesday , November 21 2017
Home / عرب دنیا / اربعین کے جلوس کیلئے سخت سیکوریٹی، موبائل فون خدمات بند

اربعین کے جلوس کیلئے سخت سیکوریٹی، موبائل فون خدمات بند

اسلام آباد 21 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) بدترین مسلکی اور فرقہ وارانہ تشدد سے بے حال معاشرے کو امام حسین رضی اللہ عنہ کی اربعین کے موقع پر ممکنہ حد تک تحفظ فراہم کرنے کے لئے کراچی سمیت پاکستان بھر میں اس موقع پرموقع پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔ کئی شہروں میں موبائل فون سروسز بھی بند کردی گئی ہیں۔خاص طور پر سندھ میں اربعین امام حسین رضی اللہ عنہ کی مناسبت سے نکالے جانے والے جلوسوں کی حفاظت کے لیے مجموعی طور پر 46 ہزار 300 سیکیورٹی اہلکار اتارے گئے ہیں۔کراچی میں اربعین کا مرکزی جلوس ایم اے جناح روڈ پر نمائش چورنگی سے شروع ہوکر ٹاور پر اختتام پذیر ہوگا۔ یہ اطلاع روزنامہ ڈان نے دی ہے ۔اخبار کے مطابق ایم اے جناح روڈ کو مکمل طور پر کنٹینرز لگاکر سیل کردیا گیا ہے ۔ جلوس کے راستے میں آنے والی دکانوں کو بھی مکمل طور پر تلاشی لیے جانے کے بعد ایک روز قبل ہی بند کردیا گیا تھا۔قبل ازیں سندھ حکومت نے 20اور 21 نومبر کو صوبے بھر میں بزرگ خواتین،بچے اور صحافیوں کو چھوڑ کر باقیوں کے لئے موٹر سائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی کا نوٹیفیکیشن بھی جاری کیا تھا ۔جلوس کے راستوں پر سیکیورٹی انتہائی سخت بتائی جاتی ہے ۔ موبائل فون جیمرز اور سراغ رساں کتوں کی بھی مدد لی جارہی ہے ۔شہر کے مختلف علاقوں میں 17 ہزار 950 رینجرز اور پولیس اہلکاورں کو تعینات کیا گیا ہے ۔سیکیورٹی اہلکار شہر کے تین سیکیورٹی زونز میں فرائض انجام دیں گے جہاں چھوٹے جلوس نکالے جارہے ہیں اور مجالس منعقد کی جارہی ہیں۔اطلاعات کے مطابق تقریباً 100 چھوٹے جلوس شہر کے مختلف علاقوں میں نکالے جارہے ہیں۔ 460 کے قریب مجالس عزا کا انعقاد بھی کیا جارہا ہے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT