Friday , November 24 2017
Home / ہندوستان / دہلی میں کانسٹبل کی پٹائی سے کمسن لڑکا فوت

دہلی میں کانسٹبل کی پٹائی سے کمسن لڑکا فوت

عوام کا احتجاجی مظاہرہ اور پولیس پر سنگباری
نئی دہلی ۔ 26 ۔ اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) علاقہ ناریلا میں دسہرہ میلہ کے دوران ایک پولیس کانسٹبل کی مبینہ پٹائی سے ایک 19 سالہ لڑکے کی آج موت واقع ہوگئی جس کے خلاف سینکڑوں مقامی لوگوں نے احتجاج کرتے ہوئے بیرون دہلی سنگھ بارڈر کے قریب قومی شاہراہ پر دھرنا دیا۔ ڈپٹی کمشنر پولیس (آوٹر) مسٹر وکرم جیت سنگھ نے بتایا کہ خاطی کانسٹبل کو معطل کردیا گیا ہے اور مزید کارروائی کیلئے تحقیقات شروع کردی گئی ہے۔ احتجاجیوں نے متوفی لڑکے راجن کی نعش کے ساتھ نیشنل ہائی وے پر دھرنا دیتے ہوئے دہلی پولیس کے خلاف نعرے بلند کئے ۔ بتایا جاتا ہے کہ شمال مغربی دہلی میں ناریلا پولیس حدود میں پیش آئے واقعہ میں ایک کانسٹبل 24 سالہ پرمود کمار نے 21 نومبر کو یہاں دسہرہ میلہ کے دوران مذکورہ لڑکے کو زد و کوب کیا تھا ۔ پولیس نے بتایا کہ ٹکٹ کاؤنٹر پر متوفی لڑکے اور ایک شخص کے درمیان بحث و تکرار ہوئی تھی جس کا الزام تھا کہ لڑکے نے ٹکٹ کیلئے 1000 روپئے کا جعلی نوٹ کی پیشکش کی تھی۔ کانسٹبل پرمود کمار جو کہ میلہ میں ڈیوٹی پر تھا ، مداخلت کرتے ہوئے لڑ کے کو مارپیٹ کی تھی ۔ یہ لڑکا بے ہوش ہوتے ہی پولیس ٹیم نے اسے ہاسپٹل میں شریک کروایا تھا ۔ ڈاکٹروں نے ابتدائی طبی رپورٹ میں بتایا تھا کہ یہ لڑ کا ذیابطیس کے شدید مرض میں مبتلا تھا اور اچانک ڈیابیٹک کوما میں چلا گیا جو کہ زندگی کیلئے خطرہ بن گئی ۔ تاہم سرکاری ذرائع نے بتایا اکہ تحقیقات کے بعد ہی کانسٹبل کے خلاف کارروائی کی جائے گی ۔ یہ لڑکا علاج کے دوران آج صبح چل بسا۔ اس واقعہ پر مقامی لوگوں نے احتجاج کرتے ہوئے پولیس کیخلاف سنگباری کردی۔ پولیس کے اعلیٰ عہدیداروں نے وہاں پہنچ کر انصاف کرنے کا تیقن دیا جس کے بعد صورتحال قابو میں آگئی۔

TOPPOPULARRECENT