Saturday , December 16 2017
Home / ہندوستان / 29 ہزار ٹن میگی کو تلف کرنا پڑا حکومت ہند کی جانب سے ہرجانہ کی طلبی پر نیسلے کااظہارافسوس

29 ہزار ٹن میگی کو تلف کرنا پڑا حکومت ہند کی جانب سے ہرجانہ کی طلبی پر نیسلے کااظہارافسوس

زیورچ ؍ نئی دہلی ۔ 12 اگست (سیاست ڈاٹ کام) نیسلے کے صدرنشین پیٹر برابیک نے کہا کہ ہندوستانی حکام نے ہمیں 29 ہزار ٹن غذائی اشیاء تلف کرنے کیلئے مجبور کیا۔ انہوں نے نیسلے کے تعلق سے ہندوستان کے تمام الزامات کو بے بنیاد قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ، برطانیہ، آسٹریلیا اور سنگاپور کی لیباریٹریز میں ان نوڈلس کا معائنہ کیا گیا اور ایسی کوئی منفی رپورٹ نہیں ملی۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے پراڈکٹس صارفین کے لئے محفوظ ہیں۔ اس دوران ہندوستان میں کمپنی کے عہدیدار نے حکومت کی جانب سے 640 کروڑ روپئے ہرجانہ طلب کرنے پر شدید ردعمل کا اظہار کیا۔ کمپنی نے ایک بیان میں کہا کہ حکومت کے اس غیرمتوقع اقدام پر ہمیں مایوسی ہوئی۔ واضح رہے کہ حکومت نے نیشنل کنزیومر ڈسپیوٹس ریڈریسل کمیشن کے روبرو کل نیسلے انڈیا کے خلاف شکایت درج کرائی جس میں 639.95 کروڑ روپئے ہرجانہ کا مطالبہ کیا گیا۔ حکومت نے کمپنی کے اس ردعمل کی پرواہ کئے بغیر کہا کہ ہرجانہ کی اس رقم میں مزید اضافہ کیا جاسکتا ہے۔ اس مقدمہ کی پہلی سماعت 14 اگست کو ہوگی۔ حکومت نے 639.95 کروڑ روپئے کے علاوہ 18 فیصد سالانہ شرح سود کی ادائیگی کا بھی مطالبہ کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT