73 سالہ شحص کو دس سال کی سزائے قید

نئی دہلی ۔ 16 ۔ جولائی (سیاست ڈاٹ کام) دہلی کی ایک عدالت نے ایک 73 سالہ تاجر کو اپنے پڑوسی کی 20 سالہ گھریلو ملازمہ کی کئی بار عصمت ریزی کرنے کی پاداش میں دس سال کی سزائے قید ستائی ہے۔ جرم کی سنگینی کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ بار بار عصمت ریزی کی وجہ سے گھریلو ملازمہ حاملہ ہوگئی تھی اور اسے ایک بچی بھی تولد ہوئی ۔ ایڈیشنل سیشن جج ایم سی گپتا نے ملزم گھنشیام داس نندوانی کو بچی کا ڈی این اے ٹسٹ کرائے جانے کے بعد ملزم قرار دیا کیونکہ بچی کا ڈی این اے ملزم کے ڈی این اے سے مطابقت رکھتا تھا ۔ ملزم کو عدالت نے عصمت ریزی کا شکار ملازمہ کو دھمکیاں دینے کا قصور وار بھی پایا جہاں ہمیشہ وہ ملازمہ کو دھمکایا کرتا تھا کہ اگر اس نے عصمت ریزی کے بارے میں کسی کو بھی بتایا تو ملزم اسے (ملازمہ) کو قتل کردے گا۔ ملزم گھنشیام داس نندوانی اشوک وہار کا ساکن بتایا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT