Wednesday , December 13 2017
Home / Top Stories / قوم پرستی کا سرٹیفکٹ جاری کرنے سے بی جے پی باز آجائے صدر مہاراشٹرا نو نرمان سینا راج ٹھاکرے کا مشورہ

قوم پرستی کا سرٹیفکٹ جاری کرنے سے بی جے پی باز آجائے صدر مہاراشٹرا نو نرمان سینا راج ٹھاکرے کا مشورہ

 

ممبئی ۔ 17 ۔ فروری (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی کو یہ مشورہ دیتے ہوئے کہ قوم پرستی کا سرٹیفکٹ جاری کرنے سے باز آجائے ۔ مہاراشٹرا نو نرمان سینا کے صدر راج ٹھاکرے نے آج کہا کہ جواہر لال یونیورسٹی کے تنازعہ میں مرکزی حکومت کو مداخلت کرنے کی چنداں ضرورت نہیں ہے۔ انہوں نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ جے این یو واقعہ پر کسی کو ہوا کھڑا کرنے کی ضرورت نہیں ہے اور نہ ہی حکومت کو مداخلت کرنا چاہئے ۔ انہوں نے استفسار کیا کہ کہیں یہ ABVP کیلئے راہ ہموار کرنے کی کوشش تو نہیں ہے اور بی جے پی کو یہ سرٹیکفٹ دینے کا اختیار نہیں بلکہ کون قوم پرست  ہے اور کون قوم دشمن ہے۔ مسٹر راج ٹھاکرے نے ممبئی میں جاریہ میک ان انڈیا پروگرام پر وزیراعظم نریندر مودی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ نریندر مودی کو ہر دو ماہ ایک مرتبہ اس طرح کا پروگرام منعقد کرنا چاہئے لیکن اب بھی وہ گجرات محبت کرتے ہیں اور ملک کے وزیراعظم کی طرح دکھائی نہیں دیتے۔ صرف بی جے پی حکومت ہی مذکورہ پروگرام میں مصروف ہے لیکن کوئی عملی کام شروع نہیں کیا گیا۔ مسٹر راج ٹھاکرے جو کہ ایک کارٹونسٹ بھی ہیں ، میک ان انڈیا کے مسکاٹ (Mascot) کیلئے شیر کے انتخاب پر سوال اٹھایا اور کہا کہ وہ اب تک میک ان انڈیا کا مطلب سمجھ نہیں سکے۔

آر ایس ایس کے دفتر اور بی جے پی کارکن کے گھر پر بم حملے
کنور (کیرالا) ۔ 17  فبروری۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) دیسی ساختہ بم آر ایس ایس کے زیرانتظام ایک سیوا کیندر اور تلسیری کے ایک بی جے پی کارکن کے مکان پر پھینکے گئے ۔ یہ واقعہ رات دیر گئے پیش آیا ۔ ایک آر ایس ایس کارکن کو کیرالا میں ہلاک کردیا گیا تھا ۔ اس پس منظر میں تازہ واقعہ کی اہمیت میں اضافہ ہوگیا ہے ۔ پولیس کے بموجب 1:45 بجے شب بم پھینکے گئے ۔ صرف کھڑکی کے ایک شیشے کو نقصان پہنچا اور کوئی بھی زخمی نہیں ہوا ۔ جگناتھ مندرم سیوا کیندر جو آر ایس ایس کے زیرانتظام ہے اور تلسیری کے مندر کے باب الداخلہ پر بھی بم پھینکے گئے ۔ علاوہ ازیں ایک بی جے پی کارکن کے مکان پر بم اندازی سے اُس کے احاطہ کی دیوار منہدم ہوگئی ۔ قبل ازیں 27 سالہ آر ایس ایس کارکن سجیت کی ہلاکت پر اس ضلع میں تشدد پھوٹ پڑا تھا ۔ بی جے پی نے سجیت کے قتل کا الزام سی پی آئی ایم پر عائد کیا ہے جس کی سی پی آئی ایم نے تردید کردی ہے اور کہا ہے کہ یہ ایک مقامی واقعہ تھا جس کا تعلق ایک لڑکی کے ساتھ بدسلوکی تھی ۔ پولیس کے بموجب قاتل کی شناخت کرلی گئی ہے اور اُسے جلد ہی گرفتار کرلیا جائے گا ۔

تھانے میں اجتماعی عصمت ریزی کا واقعہ
تھانے ۔ 17 ۔ فروری (سیاست ڈاٹ کام) ضلع تھانے کے علاقہ کلیان میں بعض نوجوانوں نے ایک 13 سالہ لڑکی کی مبینہ اجتماعی عصمت ریزی کردی۔ پولیس نے اس سلسلہ میں 5 افراد کو گرفتار کرلیا ہے جن کی شناخت سامیہ پٹیل ، پرتامیش بھویر ونائیک پاٹل ، نلیش کالے اور میسورش پاٹل کی حیثیت سے شناخت کرلی گئی ۔ پولیس نے بتایا کہ یہ واقعہ 15 فروری کی شام کے وقت پیش آیا جب نابالغ لڑکی اپنے مکان میں تنہا تھی۔ 4 نوجوانوں نے اس لڑکی کی عصمت ریزی کی جبکہ ایک نوجوان میسوش پاٹل باہر پہرہ دے رہا تھا ۔ کھڈک پاڈا پولیس نے ایک کیس درج کر کے تحقیقات شروع کردی ہے۔

TOPPOPULARRECENT