شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

ماجدؔ دیوبندی اُردو زبان …! نفرتوں کی فضاؤں میں رہ کر پیار کا آسمان رکھتے ہیں جس کے نعروں سے پائی آزادی ہم وہ اُردو زبان رکھتے ہیں ……………………… مرزا یاور علی محورؔ کاش…!! پٹیوں میں پڑا نہیں ہوتا حال بھی ادھ مرا نہیں ہوتا دوسری میں ضرور لاؤں گا …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

مرزا یاور علی محورؔ مہمان کی طرح …!! سب جان کے بھی ہوگیا انجان کی طرح اپنے وطن میں رہتا ہے مہمان کی طرح موقع جو مل گیا ذرا دنیا کی سیر کا ہرسو نکل گیا ہے وہ ارمان کی طرح ……………………… نرمل گلریزؔ خدا خیر کرے …! موبائیل سے …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

’’آثار…‘‘ مُلک لُٹ جائے گا آثار نظر آتے ہیں سارے مسند نشین مکار نظر آتے ہیں ہم نے اس ملک کی دھرتی سے محبت کی ہے پھر بھی اندھوں کو ہم غدار نظر آتے ہیں مرسلہ : محمد امتیاز علی نصرتؔ۔پداپلی ……………………… مزاحیہ غزل دعوت میں جارہی ہو تو پھر …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

فرید سحرؔ سسرے کو ٹوپی…! سسرال سے اب آئے ہیں دعوت اُرا کے ہم میکے سے اُن کو لائے ہیں تحفے بھی پاکے ہم حالانکہ باپ ہم بنے بیٹے کے اک مگر سُسرے کو ٹوپی ڈالے ہیں خرچہ کراکے ہم ……………………… لیڈرؔ نرملی ذرا دیر لگے گی …! سُسرے کو …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

شاہدؔ عدیلی غزل (مزاحیہ) بے حیائی کا ہر اک سمت نظارا ہے میاں نہ تو برقعہ ہے بدن پر نہ دوپٹہ ہے میاں بالیاں کان میں ہیں چہرا بھی چکنا ہے میاں جس کو دوشیزہ میں سمجھا تھا وہ لڑکا ہے میاں ایک تو شعر مسلسل وہ سناتا ہے میاں …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

شادابؔ بے دھڑک مدراسی قطعہ میں لومڑی نہیں ہوں بیابانِ شعر میں شیر ببر ہوں دشت و گلستانِ شعر میں شادابؔ ہوں غزل میں ہزل میں ہوں بیدھڑکؔ ٹو اِن ون کھلاڑی ہوں میدانِ شعر میں ……………………… سید اعجاز احمد اعجازؔ آج پہلی تاریخ ہے …! سب کو بتانا آج …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

شاداب بے دھڑک مدراسی ہنسنے کی مشق! دامانِ غم کو خون سے دھونا پڑا مجھے اشکوں کے موتیوں کو پرونا پڑا مجھے میری ہنسی میں سب یونہی شامل نہیں ہوئے ہنسنے کے مشق کے لئے رونا پڑا مجھے ……………………… احمدؔ قاسمی غزل (مزاحیہ) لمحہ لمحہ عذاب گرمی کا کچھ نہ …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

قرض …!! سیٹھ بولا قرض اب فوراً ادا کرنا مجھے خواہ مخواہ تو اس طرح سے کیوں پھراتا ہے مجھے میں نے اس سے یہ کہا بھائی کہ یہ تو کچھ نہیں قرض دیتے وقت تو کتنا ستایا تھا مجھے ……………………… قطب الدین قطبؔ بس …!! میرے شہر کی ٹریفک …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

احمدؔ قاسمی دیکھ لو …!! دوڑ پانی میں لگاکر دیکھ لو ریت پر کشتی چلاکر دیکھ لو تجربہ بڑھتا ہے احمدؔ قاسمی ٹھوکریں در در کی کھاکر دیکھ لو ……………………… محمد یوسف الدین آگیا پھر الکشن ارے دیکھنا جن کی شۂ پر جلے گھر ارے دیکھنا وہ اڑارئیں کبوتر ارے …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

شیخ احمد ضیاءؔ غزل کرکے احسان یوں جتانا کیا جو کمایا اُسے گنوانا کیا تم کو آنا نہ تھا نہیں آتے ہر دفعہ اک نیا بہانہ کیا زندگی کی ہزار شرطیں ہیں اُس کی ہر شرط ہم نبھانا کیا خواہشوں ، حسرتوں ، اُمیدوں کا میرا دل بن گیا ٹھکانہ …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

قطب الدین قطبؔ مسئلہ کا حل …!! اﷲ نے بنائی ہے صورت کوئی عیب نہ ڈھونڈیئے کوئی مانگے اگر پیسے تو جیب نہ ڈھونڈیئے ہر مسئلہ کا حل ہے ممکن مگر شرط یہ ہے آم کے باغ میں جاکر سیب نہ ڈھونڈیئے ……………………… روح اقبال سے معذرت کے ساتھ سیاستداں …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

شبیر علی خان اسمارٹؔ مجھے معلوم نہ تھا …!! آئے گا ایسا زمانہ مجھے معلوم نہ تھا چور بن جائے گا نیتا مجھے معلوم نہ تھا چل دیا مجھ کو سلیقے سے بناکر اُلّو ہے کہاں اُس کا ٹھکانہ مجھے معلوم نہ تھا بعد شادی کے اکڑ ساری مری ختم …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

تجمل اظہرؔ احساسِ انا …! دھوپ ڈھلتی ہے تو سایوں کو بڑھادیتی ہے پست قامت کو بھی احساسِ انا دیتی ہے بے شعوروں کو یہاں سر پہ بٹھاکر دنیا ہوشمندوں کو نگاہوں سے گرادیتی ہے ……………………… سرفراز شاہد ؔ غزل وہ لوگ ساگ دال سے آگے نہیں گئے جو لقمۂ …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

شیخ احمد ضیاءؔ ارے باپ کیا کروں …!! اک شاعرہ ہے ساتھ ، ارے باپ کیا کروں سُننا ہے ساری رات، ارے باپ کیا کروں میں نے کہا حسین ہو ، کہتی ہے لکھ کے دو لائی قلم دوات ، ارے باپ کیا کروں گونگی ہے میری لڑکی ، کہا …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

احمدؔ قاسمی جانے والی ہے …!! حکومت جانے والی ہے ، وزارت جانیوالی ہے الیکشن ہارتے ہی شان و شوکت جانیوالی ہے تمہاری چار سو بیسی سے جنتا ہوگئی واقف تمہارے ساتھ اب جھوٹی حماقت جانیوالی ہے اچانک نوٹ بندی سے سمٹ کر رہ گیا بھارت تجارت چائے کی کرنے …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

قطب الدین قطبؔ شہر کے نام …!! ایک کے بعد ایک شہر کے نام بدلتے جاؤ وعدہ کرو کچھ اور کام بدلتے جاؤ آج لاٹھی ہے تمہاری اور بھینس بھی تمہاری ممکن نہیں اپنے کئے کا انجام بدلتے جاؤ ……………………… مرزا فاروق چغتائی جاگ جا …!! ہند کے اے نوجواں …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

سید اعجاز احمد اعجازؔ ایک بوڑھے کی فریاد! مری شادی ہی کراتے تو کچھ اور بات ہوتی مرا گھر نیا بساتے تو کچھ اور بات ہوتی بہو بیٹے خوش ہیں لیکن اک میں ہی غمزدہ ہوں اگر ماں کو بھی وہ لاتے تو کچھ اور بات ہوتی مری بیوی چل …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

قطب الدین قطبؔ عروج و زوال …!! کوئی شک نہیں انداز بیاں ہے کمال کا دانا ہے تو رکھ حساب اپنے اعمال کا ایک بات پتہ کی بتاتا چلوں تجھے انتہا عروج کی ، ہے آغاز زوال کا ……………………… مرزا فاروق چغتائی الیکشن…!! ہے الیکشن کا یہ موسم ہر طرف …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

محمد انیس فاروق انیسؔ جو چاہو وہ کرو …! ہے الیکشن کازمانہ جو چاہو وہ کرو ہو کلکشن کا بہانہ جو چاہو وہ کرو یاد رکھو یہ تپتا ہوا صحرا ہے میاں جیت کا گر ہو نشانہ ، جو چاہو وہ کرو ……………………… کھڑے کیوں نہیں ہوتے …! لیڈر ہو …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

نجیب احمد نجیبؔ سب ناس…!! اس دیش کا بھوشیہ فریب نظر میں ہے کھاتے میں پندرہ لاکھ ؟ اگر اور مگر میں ہے جنتا کے گھر چراغ نہیں ہے تو کیا ہوا؟ گھی کا چراغ جلتا ہوا اپنے گھر میں ہے سب کا وکاس بول کے سب ناس کردیا تقریر …

Read More »
TOPPOPULARRECENT