Wednesday , January 16 2019

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

مسکین…! ووٹ ملنے تک یہ مسکین ہے پھر دیکھئے جنتا کو نچاتا ہے لیڈر وہ مداری ہے مل جائے جو کرسی تو بن جائے یہ فرعون جب تک نہ ملے کرسی ، ووٹوں کا بھکاری ہے ……………………… شعیب علی فیصل جاؤ جی …!! قبر پر شوہر کے تھی اک محترمہ …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

وعدہ…!؟ وعدہ کرنے میں کیا قباحت ہے یہ الیکشن کی ایک حاجت ہے لوگ بھی جانتے ہیں سب کچھ اور بھول جانا تو میری عادت ہے ……………………… نجیب احمد نجیبؔ سب ناس…!! گریجویٹ ہوا ہے کوئی پکوڑے تَلا دیئے چوتھی جماعت پاس کو پمچر سکھادیئے پوچھے نہ مجھ سے کوئی …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

طالب خوندمیری نیا سال! آنا تھا جسے ، وہ تو بہرحال آیا اندیشے کئی دِل میں نئے ڈال آیا ارزانیاں پہلے ہی سے پژمردہ تھیں مہنگائیاں خوش ہیں کہ نیا سال آیا ……………………… شبیر علی خان اسمارٹؔ مزاحیہ غزل میں نے بیوی سے جو لڑائی کی نسبتی بھائی نے پٹائی …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

محمد انیس فاروقی انیسؔ ارمان …!! دل کو ویران کرگئے سارے زخم دل کے اُبھر گئے سارے ووٹ جب دوسروں کے حق میں گئے اُس کے ارمان بکھر گئے سارے ……………………… جنتا بھی ساتھ ہے …!! قسمت گر مہربان ہو تو جنتا بھی ساتھ ہے شاہی گر دسترخوان ہو تو …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

بھاگ جا …!! ہند کے اے نوجواں اب جاگ جا کب تلک سوتا رہے گا جاگ جا اچھے دن آئیں گے تو بھی اوروں کی طرح بینک سے لے لون اور پھر بھاگ جا ……………………… سید اعجاز احمد اعجازؔ شوگر …! شوگر کو بھی بخار سمجھنے لگے ہیں لوگ دعوتیں …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

پاپولرؔ میرٹھی اُمیدوار میں بھی ہوں! میں بے قرار ہوں مدت سے ممبری کیلئے ٹکٹ مجھے بھی دلا دو اسمبلی کیلئے میں ایک عمر سے ہوں مُفلسی کی چادر میں نہیں ہے روکھی بھی روٹی مِرے مقدر میں میرا سفینہ ہے آلام کے سمندر میں میں ایک بوجھ ہوں خود …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

نعیم فراز سوگئی ہو کیا…!؟ یاد ماضی میں کھوگئی ہو کیا تم بھی مجھ جیسی ہوگئی ہو کیا آج مس کال تک نہیں آئی منتظر ہوں میں! سوگئی ہو کیا تم کو حق بات جو کہنے کی بہت عادت ہے تختہ دار پر جانے کا ارادہ ہے کیا ……………………… فیصلؔ …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

حسن قادری بیگم نامہ…! تنخواہ ساری بیگم کے ہاتھوں تھمادیتا ہوں جو جو خرچ کیا سچ سچ بتا دیتا ہوں جب کبھی بیگم کا پارہ حد سے زیادہ گرم ہو سب سے پہلے جو تیاں اس کی چھپا دیتا ہوں ……………………… ساری رسمیں ہیں دنیا کو دکھانے کیلئے ورنہ کون …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

شاداب بے دھڑک مدراسی فنِ طنزو مزاح طنز کی چوٹ ہر کوئی سہتا نہیں ظرف شادابؔ و زندہ دِلی چاہئے اپنے زخموں پہ ہنس لینا آساں نہیں گُردہ فولادی دل آہنی چاہئے ……………………… ڈاکٹر قیسی قمر نگری مزاحیہ غزل …! جس کی آنکھوں میں حسد بغض ہو کاجل کی طرح …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

مرزا فاروق چغتائی غیرضروری…!! بیوپاری جو بننا ہو تعلیم ضروری ہے عہدے کی طلب ہو تو حکمت بھی ضروری ہے لیکن یہ عجیب رسم سیاست ہے یہاں پر لیڈر کے لئے مرزاؔ سب غیرضروری ہے ……………………… محسن نقوی دشمن…!! آرائش مذاق جنوں اس طرح کرو گنجائش رفو بھی ہو دامن …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

مرزا فاروق چغتائی اکثر ہوا …!؟ ملک کے صوبوں میں یہ اکثر ہوا بھاجپا کا چرچا تھا گھر گھر ہوا جس نے کی تنقید اس پر تو میاں گول اس کا بوریا بستر ہوا ……………………… محسن نقوی سیاست کے مچھیرے…!! خدا محفوظ رکھے حوصلے اس دور میں اپنے ! اُدھر …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

محسن نقویؔ شرافت کی سیاست…! شرافت کی سیاست کرنے والوں سے کوئی پوچھے ہوس ، خونِ بشر کی ہولیوں تک کس طرح پہنچی سیاست میں غلاظت کس کی کم ظرفی آئی ہے شرافت گالیوں سے گولیوں تک کس طرح پہنچی ……………………… پاپولر میرٹھی تو میرا شوق دیکھ…! حالانکہ تو جواں …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

محسن نقویؔ دشمن …!! آرائش مذاقِ جنوں اِس طرح کرو گنجائشِ رفو بھی ہو دامن کے چاک میں باھم نظر چُراکے گزرتے رہو مگر اتنا رہے خیال کہ دشمن ہے تاک میں! ……………………… فیصلؔ وارثی مزاحیہ غزل لہو انساں کا پی کر سورہا ہے مزے کی نیند مچھر سورہا ہے …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

فرید سحرؔ وعدہ تیرا وعدہ! ہم سے وعدہ بارہ فیصد کا رہا اس کا آدھا بھی نہیں اب تک ملا ایک وعدہ ہاں مگر پورا ہوا ڈپٹی سی ایم بھائی ہمارا بن گیا ……………………… محسن نقویؔ تحفظ کی توقع…! وہ شخص تو گھوڑوں کی نمائش میں ہے مصروف مسموم بھرا …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

فرید سحرؔ گجرات کی بھابھی…! مظلوم ہے ، مجبور ہے گجرات کی بھابھی شوہر سے بہت دور ہے گجرات کی بھابھی ہنس ہنس کے ستم سہتی کیوں جانے سحرؔ وہ کچھ کہنے سے معذور ہے گجرات کی بھابھی ……………………… محسن نقوی مصروفیت جسے دیکھو وہی مصروف پھرتا ہے الیکشن میں …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

محمد انیس فاروقی انیسؔ نیا ترانہ نئے موسم کا ترانہ گارہا ہے فقیروں کا زمانہ آرہاہے لئے کشکول اب ہاتھوں میں لیڈر ’’مجھے ہی ووٹ دو‘‘ یہ گارہا ہے ……………………… تمہیں پتہ ہی نہیں تمہارے ووٹ کی کیا ہے قیمت، تمھیں پتہ ہی نہیں بدل دیتا ہے یہ قسمت ، …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

فرید سحرؔ قطعہ(طنز و مزاح) پہلے بیوی کا تو حق ادا کیجئے تین طلاق پر پھر کہا کیجئے خود ہی پھرتے ہو تنہا جہاں میں سحرؔ ساتھ بیوی کو اپنی رکھا کیجئے ……………………… غزل (طنز و مزاح) نیتا بڑا وہ کیسے بنا ہم سے پوچھئے کتنوں کا قتل اُس نے …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

محمد انیس فاروقی انیسؔ جنتا ترس رہی ہے …! موسم بغیر بارش جیسے برس رہی ہے بیوی بھی مجھ پہ یارو ویسے برس رہی ہے باتوں میں اُن کی میٹھی جنتا جو آگئی تھی وہ موج کررہے ہیں جنتا ترس رہی ہے ……………………… شاہدؔ عدیلی غزل …! پہلا سا جوش …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

محمد انیس فاروقی انیسؔ تحفظات…! بہت ہی خوبصورت جال چُن گئے ہو تم تحفظات کا ایک جال بُن گئے ہو تم چار مہینے بول کے چار سال نکال دیئے کس کی باڑوں میں یہ جال بُن گئے ہو تم ……………………… محمد شفیع مرزا انجمؔحیدرآبادی مزاحیہ غزل ان کی نوجوانی میں …

Read More »

شیشہ و تیشہ

شیشہ و تیشہ

عابی مکھنوی خودی کا راز…! خودی کے راز کو میں نے بروزِ عید پایا جی کہ جب میں نے کلیجی کو کلیجے سے لگایا جی جوحصہ گائے سے آیا اُسے تقسیم کر ڈالا جو بکرا میرے گھر میں تھا اُسے میں نے چُھپایا جی فریج میں برف کا خانہ نہ …

Read More »
TOPPOPULARRECENT