Wednesday , September 30 2020

ابوظہبی میں شادی کے پہلے سال 28 فیصد طلاق

ابوظہبی: متحدہ عرب امارات کی ریاست ابوظہبی میں شادی کے پہلے تین برس کے دوران طلاق کی شرح 50 فیصد تک پہنچ گئی۔ شادی کے پہلے سال 28 فیصد شادیاں طلاق پر ختم ہونے لگیں۔ الامارات الیوم کے مطابق ابوظبی میں سماجی ادارے کی ڈائریکٹر جنرل سلامہ العمیمی نے بتایا کہ موجودہ نسلوں کو طلاق کے بھنور سے نکالنے کے لیے غیر روایتی جدید طرز کے حل اپنانا ہوں گے۔ضروری ہوگیا ہیکہ نئے خاندان کو ایک دوسرے سے جوڑے رکھنے کے لیے نئے طور طریقے اختیار کیے جائیں۔ قدیم طور طریقوں سے گریز کیا جائے۔ اس سے مراد فریقین کے اہل خانہ کی مداخلت سے ہے۔ عام طور پر نئے جوڑے کے درمیان اختلافات ہونے پر دولہا دلہن کے رشتے دار آجاتے ہیں اور تنازعہ کو سلجھانے کے بجائے الجھا دیتے ہیں۔ سلامہ العمیمی نے کہاکہ ہمارے ادارے نے خاندان کو جوڑنے اور باہمی رشتوں کو مضبوط بنانے کے موضوع پر آن لائن مکالمہ پروگرام کیا جس میں سماجی امور کے ماہرین شریک ہوئے۔ خاندانی تعلقات کو مثبت انداز میں بنانے سنوارنے کے لیے متعدد نکات زیر بحث آئے۔ ذاتی تجربات کی مدد سے مسائل کو حل کرنے کی طرف توجہ مبذول کرائی گئی۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ دو برسوں کے دوران ابوظہبی کے معاشرے میں لوگوں کا طرز معاشرت بہت زیادہ تبدیل ہوگیا ہے۔ اس کا اثر خاندانی نظام پر بھی پڑرہاہے۔ نئی صورتحال کا تقاضہ ہیکہ طرز معاشرت کی تبدیلی کے ساتھ خاندانی روابط کو بنانے اور مضبوط کرنے کے سلسلے میں نئے افکار و خیالات کا سہارا لیا جائے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT