Wednesday , April 1 2020

این پی آر اور مردم شماری کا پہلا مرحلہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے ملتوی ہوگیا: وزارت داخلہ

نئی دہلی: وزیر اعظم نریندر مودی کے 21 روزہ لاک ڈاؤن کے اعلان کے بعد قومی آبادی کے اندراج (این پی آر) اور مردم شماری -2021 کے پہلے مرحلے کو اپ ڈیٹ کرنے کی مشق غیر معینہ مدت تک ملتوی کردی گئی ہے“ عہدیداروں نے منگل کے روز اس بات کی اطلاع دی۔

یہ دونوں مشقیں یکم اپریل سے 30 ستمبر تک کی جانی تھیں۔

وزارت داخلہ کے ایک سینئر عہدیدار نے بتایا کہ موجودہ صورتحال کی وجہ سے این پی آر اور مردم شماری کی مشقوں کو اگلے احکامات تک موخر کردیا گیا ہے۔

وزیر اعظم نے منگل کی شام کوروناوائرس کے پھیلاؤ کی وجہ سے آج آدھی رات سے 21 دن کے ملک گیر لاک ڈاؤن کا اعلان کیا۔

وزارت داخلہ نے حال ہی میں کہا تھا کہ مردم شماری 2021 اور این پی آر کو اپ ڈیٹ کرنے کی تیاری عروج پر ہے اور یکم اپریل سے شروع ہوگی۔

وزارت نے مردم شماری 2021 اور این پی آر کی تیاری کے کام کی حیثیت سے مردم شماری کے ڈائریکٹرز کی ایک کانفرنس کے بعد یہ بات کہی۔

متعدد ریاستی حکومتوں کی طرف سے این پی آر کی مخالفت کی گئی ہے اور ان میں سے کچھ نے اس مشق کی مخالفت کا اظہار کرتے ہوئے قرارداد بھی منظور کی تھی۔

جن ریاستوں نے این پی آر کی مخالفت کی ہے ان میں کیرالہ ، مغربی بنگال ، پنجاب ، راجستھان ، چھتیس گڑھ اور بہار شامل ہیں۔

تاہم ان میں سے بیشتر نے یہ بھی کہا کہ وہ مردم شماری کے گھروں کی فہرست سازی کے مرحلے میں تعاون کریں گے۔

این پی آر کا مقصد ملک میں رہنے والے ہر شہری کا ڈاٹا جمع کرکے سرکاری اسکیموں کو صحیح لوگوں تک پہنچانا ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT