Saturday , December 5 2020

تلنگانہ میں آئندہ 5 دنوں میں مزید بارش کی پیش قیاسی

دونوں تلگو ریاستوں میں طوفان کا خطرہ ، بارش کے دوران عوام سے گھروں میں رہنے کی اپیل

حیدرآباد:ریاست کے بیشتر اضلاع اور حیدرآباد میں بارش کا سلسلہ جاری ہے اور ریاست میں آئندہ 5 دن کے دوران مزید بارش کی پیش قیاسی کی گئی ہے ۔ محکمہ موسمیات کے مطابق خلیج بنگال میں ہوا کے دباؤ میں نمایاں کمی ریکارڈ کی جا رہی ہے جس کے سبب تلنگانہ اور آندھراپردیش میں طوفان کا خطرہ بڑھتا جا رہا ہے ۔ ریاستی حکومت کی جانب سے تمام امتحانات کو دسہرہ تک کیلئے ملتوی کرنے کے علاوہ انٹرمیڈیٹ میں داخلوں کی تاریخ میں توسیع کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ بارش کے متاثرین کو فراہم کی جانے والی 10ہزار روپئے کی تقسیم کے عمل کا کے ٹی راما راؤنے آغاز کرتے ہوئے کہا کہ ریاستی حکومت سیلاب کے متاثرین کے شانہ بشانہ کھڑی ہے ۔ریاست تلنگانہ اور شہر حیدرآباد میں آج دوپہر سے مسلسل ہلکی اور تیز بارش ریکارڈ کی گئی جس کے سبب متاثرہ علاقوں میں راحت کاری کاموں کی انجام دہی و صفائی کا عمل متاثر ہوا ہے ۔ شہر کے کئی نشیبی علاقوں سے عوام کے تخلیہ کے اقدامات کے علاوہ شہر حیدرآباد میں محکمہ پولیس اور مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کی جانب سے گھروں میں رہنے کے اعلانات کئے جاتے رہے اور عوام سے خواہش کی جا رہی ہے کہ وہ بلا ضرورت شدید گھروں سے نکلنے سے اجتناب کریں ۔ فلک نما برج پر تین یوم قبل پڑنے والے شگاف کے مرمتی کام تیزی سے جاری ہیں لیکن برج کو ٹریفک کیلئے ابھی نہیں کھولا گیا اسی طرح پرانا پل برج کو بھی ٹرک‘ موٹر گاڑیوں کے علاوہ بسوں کے لئے بند رکھا گیا ہے لیکن محکمہ آبپاشی و انجنیئرنگ کے عہدیداروں نے برج میں شگاف کے سلسلہ میں کہا کہ اس کی مرمت ممکن ہے اور جلد ہی ان مرمتی کاموں کو مکمل کرلیا جائے گا۔ شہر میں دوپہر سے جاری بارش کے دوران محکمہ موسمیات نے رات دیر گئے موسلا دھار بارش کی پیش قیاسی کی ہے ۔

شہر حیدرآبادکے مضافاتی اور نواحی علاقوں میں مسلسل بارش کے سبب اطراف کے تالاب لبریز ہوچکے ہیں اور کہا جارہا ہے کہ شہر حیدرآباد میں موسلا دھار بارش کی صورت میں مزید تباہی کا خدشہ پیدا ہوسکتا ہے۔ شہر کے تالابوں اور بڑے نالوں کے قریب موجود نشیبی علاقوں کی بستیوں میں رہنے والے مکینوں کو محفوظ مقامات پر منتقل ہوجانے کی ہدایات دی گئی ہیں اور ان سے کہا گیا ہے کہ وہ اگر مکان کی نچلی منزل پر ہیں تو کسی دوسرے مقام پر منتقل ہوجائیں اور اگر اوپری منزلیں موجود ہیں تو ان پر چلے جائیں۔ شہر حیدرآباد کے پڑوسی ضلع رنگاریڈی میں ضلع انتظامیہ کی جانب سے تمام عہدیداروں کی تعطیلات کو منسوخ کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے انہیں آئندہ 3یوم کے دوران رخصت حاصل نہ کرنے کی تاکید کی گئی ہے اور چوکس رہنے کے لئے کہا گیا ہے۔رامنتا پور کے علاوہ اپل اور بعض دیگر علاقوں میں ریاستی وزیر کے ٹی آر کے دورہ کے دوران عوام نے شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وزیر موصوف نے بارش سے متاثرہ علاقوں کا روڈ شو کیا ہے اور متاثرین کو نظر انداز کرتے ہوئے چلے گئے۔مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد ‘ تلنگانہ اسٹیٹ سدرن پاؤر ڈسٹریبیوشن کمپنی لمیٹڈ ‘ حیدرآباد میٹرو پولیٹین ڈیولپمنٹ اتھاریٹی ‘ محکمہ واٹر ورکس ‘محکمہ پولیس اور ٹریفک پولیس کے علاوہ محکمہ مال ‘ آبپاشی اور دیگر متعلقہ محکمہ جات کی جانب سے شہر میں حالات کو معمول پر لانے کی کوششوں کا سلسلہ جاری ہے اور بارش سے متاثرہ علاقوں میں غیر سرکاری تنظیموں کی جانب سے بڑے پیمانی پر رفاہی و فلاحی کاموں کو انجام دیا جا رہاہے ۔ الجبیل کالونی میں جہاں سب سے پہلے پانی داخل ہوا تھا اس علاقہ میں پانی کی سطح میں بھاری کمی ریکارڈ کی گئی ہے جبکہ حافظ بابا نگر کے علاقہ میں بالاپور سے بہہ کر پہنچنے والے پانی کی نکاسی مکمل ہوچکی ہے لیکن صفائی کا عمل جاری ہے۔ ٹولی چوکی کے علاقوں میں بارش کے سبب جمع ہونے والا پانی اب بھی موجود ہے ۔ کمشنر مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد مسٹر لوکیش کمار نے شہریوں سے اپیل کی کہ وہ بارش کے دوران گھروں سے نکلنے سے گریز کریں اور بارش کی شدت کے وقت سڑکوں کو تفریح گاہ نہ بنائیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT