Saturday , December 7 2019

شیعہ وقف بورڈ کے سربراہ وسیم رضوی نے اویسی کا موازنہ بغدادی سے کیا

یوپی شیعہ وقف بورڈ کے چیئرمین وسیم رضوی نے آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے سربراہ اسدالدین اویسی پر سخت حملہ کیا ہے اور ان کا مقتول اسلامک اسٹیٹ (داعش) کے سربراہ ابوبکر البغدادی سے تشبیہ دی ہے۔

رضوی نے الزام لگایا ہے کہ اویسی اپنی تقاریر کے ذریعے مسلمانوں کو دہشت گردی اور خونریزی کی طرف راغب کررہے ہیں۔ 

آج ابوبکر البغدادی اور اسدالدین اویسی میں کوئی فرق نہیں ہے۔ بغدادی کے پاس ایک فوج اور اسلحہ اور گولہ بارود تھا جو وہ دہشت پھیلانے کے لئے استعمال کرتا تھا ، اویسی اپنے ’’ ذبان ‘‘ (تقریروں) کے ذریعے اس کے ذریعہ دہشت پیدا کررہے ہیں۔ وہ مسلمانوں کو دہشت گردی اور خونریزی کی کارروائیوں کی طرف راغب کررہا ہے۔ اب وقت آگیا ہے کہ اس پر اور مسلم پرسنل لا بورڈ پر پابندی لگائی جائے۔ 

ایودھیا تنازعہ کیس میں سپریم کورٹ کے حالیہ تاریخی فیصلے پر مجلس اتحاد المسلمین سربراہ بیان کے بعد اویسی کے خلاف رضوی کے تبصرے سامنے آئے ہیں۔ اویسی نے ایودھیا تنازعہ پر سپریم کورٹ کے فیصلے سے عدم اطمینان کا اظہار کیا ہے۔

 رضوی اپنے بی جے پی کے حامی موقف کے لئے جانا جاتا ہے اور حال ہی میں انہوں نے ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے لئے 51،000 روپے کی امداد دی ہے۔ انہوں نے اس معاملے پر عدالت کے فیصلے کا بھی خیر مقدم کیا ہے۔ 

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT