Friday , October 30 2020

فرانس میں گستاخانہ کارٹون دکھانے پر ٹیچر کا قتل

پیرس : فرانس میں ایک چیچن نوجوان نے طلبا و طالبات کو ’اظہار خیال کی آزادی‘ کے نام پر گستاخانہ خاکے دکھانے والے ملعون ٹیچر کو چھریوں کے وار سے قتل کردیا ، جسے پولیس نے فائرنگ کرکے شہید کردیا۔پولیس کے مطابق یہ واقعہ پیرس کے شمال مغرب میں واقع کونفلان سینٹ اونوریئن میں پیش آیا۔ کئی روز قبل اسکول ٹیچر نے بچوں سے پیغمبر اسلام کے گستاخانہ کارٹون پر گفتگو شروع کی تھی جس پر کئی والدین نے اپنے غم و غصے کا اظہار کیا ۔توہین رسالت پر ہلاک ہونے والے ٹیچر نے کچھ روز قبل بچوں کو گستاخانہ خاکے بھی دکھائے تھے۔ بعد ازاں چیچن نوجوان نے گستاخ ٹیچر پر خنجر سے حملہ کرکے اسے مار دیا۔ فرانسیسی پولیس نے اسے دہشت گردی کا واقعہ قرار دیا ہے۔پولیس کے مطابق 18 سالہ حملہ آور کو بوائز اسکول سے باہر آنے پر 600 میٹر کی دوری سے گولی کا نشانہ بنایا ،جس کے ہاتھوں میں خنجر دیکھا گیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT