’میں تلنگانہ کی بیٹی اور بہو ہوں‘ : شرمیلا کا دعوی

,

   

نئی پارٹی بناوں گی اورپد یاترا بھی کرونگی ۔ شہیدان تلنگانہ سے ملاقات کا بھی اعلان
کے سی آر و وجئے شانتی کہاں پیدا ہوئے؟

حیدرآباد: سابق چیف منسٹر ڈاکٹر راج شیکھر ریڈی کی دختر شرمیلا نے اعلان کیا کہ وہ تلنگانہ میں نئی سیاسی پارٹی تشکیل دیں گی اور پدیاترا بھی کریں گی۔ تلنگانہ تحریک میں جان قربان کرنے والے نوجوانوں اور طلبہ کے ارکان خاندان سے ملاقات کریں گی۔ انہوںنے میڈیا سے غیر رسمی بات چیت میں کہا کہ وہ تلنگانہ کی دختر ہیں۔ ان کی تعلیم و پرورش تلنگانہ میں ہوئی ہے اور وہ بہو بھی تلنگانہ کی ہیں۔ انہوں نے استفسار کیا کہ چیف منسٹر کے سی آر اور بی جے پی کی قائد وجئے شانتی کہاں پیدا ہوئے پہلے یہ معلوم کریں۔ وہ تلنگانہ کی بہو ہیں اور تلنگانہ عوام کے بارے میں سوچنا ان کا اختیار ہے۔ شرمیلا نے اعتراف کیا کہ سیاسی معاملت میں ان کے بھائی چیف منسٹر آندھرا پردیش جگن موہن ریڈی سے اختلافات ہیں مگر اختلافات سیاسی ہیں خاندانی تعلقات پر اس کا کوئی اثر نہیں ہے۔ تاہم نئی سیاسی پارٹی تشکیل دینے کے معاملے میں انہیں ان کی ماں وجیہ اماں کی مکمل تائید و حمایت حاصل ہے۔ انہیں وائی ایس آر کانگریس میں کیوں نظر انداز کیا گیا سوال پر شرمیلا نے میڈیا کو مشورہ دیا کہ وہ یہ سوال جگن موہن ریڈی سے کریں۔ شرمیلا نے کہاکہ وہ راجنا راجیم تشکیل دینے تلنگانہ پہونچی ہیں۔ تلنگانہ کے مسائل ہی ان کی ترجیح رہیں گے۔ پولاورم سے پوتی ریڈی پاڈو تک وہ صرف تلنگانہ کی اہمیت و افادیت کو ترجیح دیں گی اس کیلئے اپنے بھائی چیف منسٹر آندھراپردیش جگن موہن ریڈی کا مقابلہ کرنے بھی تیار ہیں۔ وہ کسی کی چھوڑی ہوئی تیر نہیں ہے بلکہ تلنگانہ کے مفادات کا تحفظ کرنے اور عوام کو ان کے جائز حقوق دلانے جدوجہد کریں گی۔ اگر جگن موہن ریڈی آندھراپردیش کی فلاح و بہبود کے لیے کوشش کررہے ہیں تو وہ بحیثیت بہو تلنگانہ عوام کی ترقی اور فلاح و بہبود کے لیے جدوجہد کریں گی۔ شرمیلا نے کہا کہ کے سی آر نے تحریک کے نام پر حکومت تشکیل دی اور وجئے شانتی ہندوتوا کا نعرہ دے رہی ہے۔ چیف منسٹر کے سی آر نے سابق چیف منسٹر راج شیکھر ریڈی کے فلاحی اسکیمات کی نقل کی ہے۔ آروگیہ شری اسکیم اور فیس ریمبرسمنٹ اسکیم کیساتھ اس کالرشپس کی اسکیم کو نظرانداز کردیا گیا ہے۔ جب کورونا بحران سے ریاست کے عوام پریشان تھے۔ اس وقت چیف منسٹر کے سی آر فام ہائوز میں آرام کررہے ہیں۔

ADVERTISEMENT