ناجائز تعلقات کے دوران کمسن بچہ کا قتل، عاشق کے ساتھ ماں کی انسانیت سوز حرکت

   

حیدرآباد۔ ایک خاتون اپنے ناجائز تعلقات کو شادی کی شکل دینا چاہتی تھی۔ سماج میں افراد خاندان اور شوہر کی عزت کی پرواہ کئے بغیر اس نے فیصلہ کرلیا تھا۔اس خاتون کا ناجائز رشتہ اس قدر پروان چڑھ گیا تھا کہ اسے کسی چیز کی پرواہ نہیں تھی۔ شوہر تو اس کے لئے محض ایک رشتہ تھا جس کو وہ ختم کرنا چاہتی تھی لیکن اس کی ان کوششوں میں اس کا اپنا لخت جگر 3 سالہ بیٹا رکاوٹ بن رہا تھا جس کو اس ڈائن صفت خاتون نے راستہ سے ہٹادیا۔ جیڈی میٹلہ پولیس اسٹیشن حدود میں پیش آئے کمسن بچہ کے قتل کیس کی حقیقت کو پولیس نے منظر عام پر لایا۔ اطلاعات کے مطابق کمسن اومیش کی والدہ اریہ اور اس کے عاشق بھاسکر کو پولیس نے حراست میں لے لیا۔ امکان ہے کہ انہیں مزید پوچھ تاچھ کے بعد بہت جلد عدالت میں پیش کیا جائے گا۔ ان دونوں کی پولیس حراست کی تصدیق انسپکٹر جیڈی میٹلہ پولیس مسٹر کے بالراج نے کردی۔ انہوں نے بتایا کہ تین سالہ کمسن لڑکے کی موت کی اطلاع پولیس کو ہاسپٹل سے ہوئی تھی۔ پولیس نے فوری اس کیس کی تحقیقات کرتے ہوئے حقیقت کا پتہ چلایا۔ پہلے اس کمسن بچہ کی موت اس کی والدہ اریہ کی مار پیٹ کی وجہ سے ہونے کی اطلاع دی گئی تھی۔تاہم پولیس نے اپنی تحقیقات میں پتہ چلایا کہ لڑکے کی والدہ شوہر سومیش سے علحدہ رہتی تھی اور بھاسکر نامی شخص کے ساتھ اس کے ناجائز تعلقات تھے جس میں بچہ اومیش رکاوٹ بن رہا تھا۔ اس ڈائن صفت خاتون نے اپنے بچہ کو مار پیٹ کا نشانہ بنایا بلکہ آشنا کے ذریعہ بھی شدید زدوکوب کرایا اور بڑی بے رحمی سے آشنا نے بچہ کو اس کی ماں کے سامنے اس طرح پیٹا کہ وہ مار کی تاب نہ لاکر فوت ہوگیا۔ پھر اس بچہ کو ہاسپٹل منتقل کیا گیا جہاں ڈاکٹروں اور عملے کی مستعدی نے اس خاتون کا بھانڈہ پھوڑ دیا۔

ADVERTISEMENT