Wednesday , February 26 2020

نویں جماعت کی طالبہ کی نعش کلاس روم میں دستیاب

گوپال گنج (بہار) ۔12 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) ریاست بہار کے ضلاع گوپال گنج کے مقام برولی تھانہ کے دیوا پو ر ہائی اسکول میں 9ویں جماعت کی طالبہ کا قتل کرنے کے بعد اس کی نعش کو کمرہ جماعت میں چھوڑ کر باہر سے قفل کر دیا گیا۔ حادثہ کے بعد شام کو طالبہ کی نعش اس کے کلاس روم میں ملی۔ مہلوکہ طالبہ کی شناخت دیواپورگا?ں کے باشندہ لال بابو پٹیل کی لڑکی پرینکاکماری کے طو ر پر ہوئی ہے۔حادثہ کی اطلاع پاکر پولیس نے نعش کو اپنے قبضے میں لیکر تفتیش شروع کردی ہے۔ اہل خانہ نے بتایاکہ طالبہ پیرکو اسکو ل میں پڑھنے گئی تھی۔ طالبہ کا کلاس روم دوسری منزل پر تھا۔ اسکول میں چھٹی ہونے کے بعد تمام طلبہ گھر چلے گئے لیکن طالبہ اپنے گھر نہیں پہنچی تو اہل خانہ نے تنعش شروع کردی۔کافی دیراور شام تک وہ لوگ پرینکا کو تنعش کرتے ہوئے اسکول پہنچے اسکول کے کمرے سے طالبہ کی نعش فرش پر ملی۔ کلاس روم میں باہر سے مقفل تھا۔ طالبہ کے ہاتھ اور دونوں پیربندھے ہوئے تھے۔ قتل کرنے کے بعد کلاس روم کو باہر سے بند کرنے کی بات بتائی جارہی ہے۔حادثہ کی اطلاع پاکر تھانہ انچارج رتیش کمار نے پرنسپل کو چابی کے ساتھ تالا کھولنے کیلئے اسکول بلایا لیکن بہت دیر تک پرنسپل نہیں پہنچ سکے تھے۔ تھانہ انچارج نے کہاکہ معاملے کی جانچ کی جارہی ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT