پرینکا کی امیدواری پر مودی کا حلقہ وارانسی مرکز توجہ بننے کا امکان

وارانسی، 20 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) 2019 کے عام انتخابات میں وارانسی پورے ملک کی نظر اپنی جانب مرکوز کرسکتا ہے اگر کانگریس جنرل سکریٹری و مشرقی اترپردیش سے کانگریس کی انچارج پرینکا گاندھی وزیر اعظم نریندر مودی کے خلاف انتخابی میدان میں اترتی ہیں۔پرینکا کے مودی کے مقابلے میں وارانسی سے انتخابی میدان میں اترنے کی چہ میگوئیاں کافی تیز ہوگئیں ہیں۔ یو پی قانون ساز کونسل کے رکن دیپک سنگھ نے ہفتہ کو کہا کہ اگرچہ پرینکا گاندھی نے وزیر اعظم کے خلاف وارانسی سے انتخابی میدان میں اتارنے کا ذہن بنالیا ہے لیکن اس کا حتمی فیصلہ صدر کانگریس صدر راہول گاندھی اور یو پی اے چیئر پرسن سونیا گاندھی کو کرنا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پرینکا ایک ’آئرن لیڈی‘ ہیں اور کافی حد تک اپنی دادی اندرا گاندھی سے مماثلت رکھتی ہیں۔ انہوں نے مودی کے خلاف انتخاب لڑنے اور ووٹروں کو یہ پیغام دینے کا ذہن بنا لیا ہے کہ تبدیلی کا وقت آگیا ہے۔ وہ مودی کا پردہ فاش کرکے سب کے سامنے یہ حقیقت آشکار کر یں گی کہ کس طرح وزیر اعظم نہ صرف وارانسی بلکہ پورے ملک کو دھوکہ دے رہے ہیں۔ نیز وہ مودی کو شکست دینے میں کامیاب رہیں گی۔ اس سے قبل پرینکا گاندھی نے بذات خود ایک ’بڑائی لڑائی‘ کا اشارہ دیا تھا۔ پریاگ سے وارانسی تک گنگا یاترا کے دوران انھوں نے مودی پرپے در پے حملے کئے تھے اور غریب عوام کے لئے کچھ نہ کرنے کا الزام لگایا تھا۔ ساتھ ہی انہوں نے یہاں سے الیکشن لڑنے کا بھی عندیہ دیا تھا۔ بھائی راہول گاندھی نے بھی ان کے اس خواہش کو حمایت کی تھی اور اس کے امکانات کو خارج نہیں کیا تھا۔ راہول گاندھی نے یہ کہتے ہوئے امکانات کے سبھی دروازے کھول دئے تھے کہ نہ تو وہ اس سے انکار کررہے ہیں اور نہ ہی اس کا اقرار کر رہے ہیں۔ وارانسی میں ساتویں اور آخری مرحلے کے تحت 19 مئی کو ووٹ ڈالے جائیں گے ۔ وہیں وزیر اعظم 26 اپریل کو اپنا پرچہ نامزدگی داخل کریں گے ۔وارانسی سیٹ کے لئے پرچہ نامزدگی کا آغاز 22 اپریل سے ہوگا۔ وارانسی سے وزیراعظم مودی کے علاوہ کسی بھی بڑی پارٹی نے ابھی تک اپنا امیدوار اعلان نہیں کیا ہے ۔یہاں تک کہ بھیم آرمی چیف چند شیکھر عرف راون نے پہلے یہاں سے الیکشن لڑنے کا اعلان کیا تھا لیکن اب انتخابی میدان میں نہ اترنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ دیپک سنگھ نے مزید کہا کہ مودی کو انہیں کے حلقے میں گھیرنے کے مقصد کے تحت کانگریس سروے ٹیم وارانسی میں مسلسل کیمپ کرر ہی ہے جلد ہی انتخابی حکمت عملی ترتیب د جائے گی۔علاوہ ازیں رابرٹ وڈرانے ایک ہزار نوجوان پر مبنی ایک ٹیم تشکیل دینے کو کہا ہے جو امیٹھی اور رائے بریلی میں 6 مئی کو ووٹنگ کے بعد وارانسی میں اپنی ذمہ داریاں سنبھالیں گے ۔

’اچھے دن ‘ کا اثر! مودی 5 سال میں
چوکیدار سے چور بن گئے: راہول
بھیلائی ؍ بیلاسپور ، 20 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی کو نشانہ بناتے ہوئے صدر کانگریس راہول گاندھی نے آج کہا کہ بی جے پی کا 2014ء کا انتخابی نعرہ ’’اچھے دن‘‘ نے اب ’’چوکیدار چور ہے‘‘ کو جگہ دے دی ہے۔ چھتیس گڑھ میں لوک سبھا الیکشن کا اعلان ہونے کے بعد پہلی بار انتخابی ریلیوں سے خطاب کرتے ہوئے راہول نے کہا کہ چوکیدار چور ہے کا نعرہ مقبول ہورہا ہے۔ آپ کہیں بھی جائیں، جب آپ ’’چوکیدار‘‘ کا نام لیں تو جواب آتا ہے کہ ’’چور ہے‘‘۔ راہول نے اپنی تقریر کی شروعات ’چوکیدار چور ہے‘ کے فقرے سے ہی کی اور مودی حکومت پر رافیل معاملت میں بے قاعدگیوں کا الزام عائد کیا۔

TOPPOPULARRECENT