Wednesday , August 12 2020

62 ملیشین ، 11 سعودی تبلیغیوں کو دہلی کی ایک عدالت کی طرف سے ملی راحت

62 ملیشین ، 11 سعودی تبلیغیوں کو دہلی کی ایک عدالت کی طرف سے ملی راحت

نئی دہلی: دہلی کی ایک عدالت نے 62 ملائیشیا اور 11 سعودی عرب کے شہریوں کو 7000 سے 10،000 روپے تک جرمانہ عائد کرنے کے بعد انہیں آزادانہ طور پر چلنے کی اجازت دی ہے۔ انہوں نے مارچ میں دہلی کے نظام الدین مرکز میں تبلیغی جماعت کی جماعت میں شرکت کی تھی۔

اس ہفتے کے اوائل میں عدالت نے انہیں ضمانت منظور کرنے کے بعد غیر ملکی شہریوں نے سودے بازی کی درخواست منتقل کردی تھی۔

یہ ملزم اور استغاثہ کے مابین ابتدائی مذاکرات ہیں جس میں ملزم استغاثہ کی طرف سے کچھ مراعات کے بدلے میں جرم ثابت کرنے پر راضی ہوتا ہے۔

لاجپت نگر کے سب ڈویژنل مجسٹریٹ (ایس ایم ڈی) جو شکایت کنندہ تھا ایڈیشنل کمشنر آف پولیس اور نظام الدین ایریا تھانے کے انسپکٹر نے ان کی درخواست پر کوئی اعتراض نہیں اٹھائے جانے کے بعد عدالت نے انہیں آزادانہ چلنے کی اجازت دی ہے۔

اس معاملے میں غیر ملکی کی نمائندگی کرنے والے وکیل ہری ہاراں کے مطابق میٹرو پولیٹن مجسٹریٹ سدھارتھ ملک نے ملائیشین کو ہر ایک کو 7،000 روپے کی ادائیگی پر چھوڑ دیا جبکہ میٹرو پولیٹن مجسٹریٹ ایشیش گپتا نے 11 سعودی شہریوں کو 10،000 روپے کی ادائیگی پر آزادانہ طور پر چلنے کی اجازت دی۔

جمعرات کو 60 ملائیشینوں میں س ہر ایک پر 7000 روپے جرمانے کی ادائیگی پر آزادانہ طور پر چلنے کی اجازت دی گئی تھی۔ انہوں نے ہلکے الزامات کو قبول کرتے ہوئے کم سزا کا مطالبہ کیا تھا۔

اب تک اسی کیس میں افغانستان ، برازیل ، چین ، امریکہ ، یوکرین ، آسٹریلیا ، مصر ، روس ، الجیریا ، بیلجیئم ، سعودی عرب اور دیگر سے تعلق رکھنے والے متعدد غیر ملکی شہریوں کو ضمانت دی جا چکی ہے۔ ان سب نے درخواستیں منتقل کیں ہیں۔

غیر ملکی شہری اس جماعت کا حصہ تھے ، جو ہندوستانی حکومت کی جانب سے جاری کردہ ویزا کے اصولوں اور کورونا وائرس ہدایات کی خلاف ورزی کے الزام میں ملوث تھے۔

دہلی پولیس کرائم برانچ نے اس معاملے کے سلسلے میں 900 سے زائد غیر ملکی شہریوں کا نام لیا ہے۔ انہیں گرفتار نہیں کیا گیا ہے ، حالانکہ مرکز نے ان کا ویزا منسوخ کر کے انہیں بلیک لسٹ کردیا ہے۔

یہ ایف آئی آر تبلیغی جماعت کے رہنما مولانا سعد کاندھلوی اور دیگر کے خلاف 31 مارچ کو درج کی گئی تھی۔

ملزمان پر تعزیراتی ضابطہ اخلاق کی دفعہ 144 کے تحت ممنوعہ احکامات کی خلاف ورزی ، تعزیراتی بیماریوں کے ایکٹ ، ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایکٹ کے تحت بھی پابندی عائد کی گئی ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT