Wednesday , September 30 2020

اردن میں مساجد دو ہفتوں کیلئے دوبارہ بند

عمان: کورونا وائرس کے باعث اردن میں بحالی کے بعد تمام مساجد میں باجماعت نماز معطل اور دیگر عبادت گاہیں اور تمام تجارتی سرگرمیاں جمعرات 17 ستمبر سے دوبارہ بند کردی جائیں گی ہیں۔اردن کی نیوز ایجنسی پترا کے مطابق حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ کورونا وائرس کی دوسری لہر کے خدشے کے باعث جزوی لاک ڈاؤن کیا جارہاہے۔اردن کے وزیر مملکت برائے میڈیا امجد العضایلہ نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہیکہ ملک میں کورونا کے مریضوں کی تعداد میں اضافے کے پیش نظر صحت حکام نے دو ہفتوں کے لیے مذہبی، سماجی و تجارتی سرگرمیاں بند کرنے کی تجویز کی ہے اس تجویز کو کابینہ نے منظور کرلیا۔دوسری طرف وزیر تعلیم تیسیر النعیمی نے بتایا ہے کہ جمعرات سے تمام سرکاری ونجی سکول بند ہوں گے، تعلیمی سرگرمیاں آن لائن جاری رہیں گی۔جاری ہونے والے اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ تمام ریستوران اور کیفے ہوم ڈلیوری کی خدمات فراہم کر سکیں گے جبکہ عام مارکیٹیں بند رہیں گی۔واضح رہے کہ اردن میں دو ہفتہ قبل تعلیمی سرگرمیاں بحال ہوئی تھیں جبکہ 5 دن پہلے ایئرپورٹس کو انٹرنیشنل پروازوں کے لیے کھول دیا گیا تھا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT