Wednesday , April 1 2020

حسنی مبارک کی مکمل فوجی اعزاز کے ساتھ تدفین

قاہرہ ۔ 26 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) مصر میں سابق صدر حسنی مبارک کی مکمل فوجی اعزاز کے ساتھ تدفین عمل میں آئی۔ بڑی تعداد میں حسنی مبارک کے حامیوں نے سابق صدرکے پوسٹر کے ساتھ جلوس جنازہ میں شرکت کی ۔ حسنی مبارک کے آخری دیدار کیلئے ان کی نعش کو نیوقاہرہ کی ایک مسجد کے کامپلکس میں لایا گیا ۔ مصر میں 1981 سے 2011 تک بلا شرکت غیرے حکمرانی کرنے والے سابق صدر حسنی مبارک 91 سال کی عمر میں کل خالق حقیقی سے جا ملے۔ مصر کے سابق صدر حسنی مبارک کا مقامی ہاسپٹل میں انتقال ہوگیا ہے، وہ انتہائی نگہداشت کے وارڈ میں شریک تھے جہاں انہیں مصنوعی تنفس پر رکھا گیا تھا۔ ان کے دونوں صاحبزادے حال میں کرپشن الزامات میں رہا ہوئے تھے۔ صدر حسنی مبارک کا 30 سالہ دور صدارت 2011 میں پرتشدد عوامی مظاہروں کے بعد اختتام پذیر ہوا تھا اور اس دوران ہلاک ہونے والے 239 مظاہرین کے قتل کے الزام میں سابق صدر کو جیل بھیج دیا گیا تھا۔حسنی مبارک مقدمہ کا سامنا کرنے والے پہلے عرب لیڈر تھے۔ جیل میں محروس قائد 6 سال تک قانونی جنگ لڑنے کے بعد 2017 میں رہا کردیئے تھے تاہم قید و بند کے دوران ہی ان کی طبیعت بگڑنے لگی تھی۔ رہائی کے بعد بھی وہ عوامی مقامات پر کم ہی نظر آتے تھے۔حسنی مبارک 60 کی دہائی میں ملک کی فضائیہ اکیڈمی کے ڈائریکٹر اور بعدازاں مصر فضائیہ کے کمانڈر بھی رہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT