نیپال۔اس دیش میں مسلمانوں نے سناتھن ہندو تہذیب کی حفاظت کے لئے حکومت کے خلاف کھولا مورچہ۔

کھاٹمنڈو۔نیپال کے کھاٹمنڈو گھاٹی میں صدیوں سے رہنے والے مسلمان‘ مقامی نیوار طبقے کے سناتھن ہندو تہذیب کی حفاظت کی مانگ کی حمایت میں آگے ائے ہیں۔

دراصل حکومت نے عام اور ذاتی نیاسوں کو قومی درجہ فراہم کرنے کے لئے ایک قانون کو منظوری دی ہے‘ جس کے بعد سے یہ مانگ کی جارہی ہے۔

مقامی مسلمانوں نے ایک گروپ نے نیوار مسلم سوسائٹی کے اراکین سے سناتھن ہندودھرم اور تہذیب کی بازیابی کی مانگ کو لے کر پیر کے روز کھاٹمنڈو میں نکالی گئی ریالی میں شرکت کی۔ اس موقع پر مذکورہ احتجاجیوں کے ہاتھوں میں تختیاں بھی تھیں۔

گروپ نے کہاکہ ”کمیونسٹ پارٹی کی جانب سے پارلیمنٹ میں پیش کئے گئے قانون کا حمایت ملتی ہے تو سناتھن ہندو دھرم خطرے میں پڑسکتا ہے“۔

کے پی شرما عالی پالیسی کمیونسٹ پارٹی کی حکومت نے نیاس کو نئے قانون کے تحت مستحکم بنانے کے لئے تمام عوامی اور ذاتی نیاسوں کا قومی درجہ فراہم کرنے کے مقصد سے ایک کمیشن قائم کرنے کے حوالے سے پارلیمنٹ میں ایک قانون پیش کیاہے۔

قانون کے متعلق نیوار سماج کے لوگو ں کی تشویش بڑھتی جارہی ہے

TOPPOPULARRECENT