۔16 نشستوں کے ساتھ کے سی آر اپنی مرضی کا وزیر اعظم بنا سکیں گے

کانگریس اور بی جے پی عوامی اعتماد سے محروم۔ٹی آر ایس ورکنگ صدر کے ٹی آر کا دعوی
حیدرآباد 21 مارچ ( این ایس ایس ) ٹی آر ایس کے ورکنگ صدر کے ٹی راما راو نے آج کہا کہ آئندہ انتخابات کے بعد مرکز میں بی جے پی کو اکثریت حاصل نہیں ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ پانچ سال میں وزیر اعظم نریندر مودی کی مقبولیت کا گراف گھٹا ہے جبکہ کانگریس جدوجہد کا شکار ہے انہوں نے کہا کہ حالانکہ عوام نے بی جے پی کے حق میں ووٹ دیا تھا لیکن نریندر مودی عوام کی موثر خدمت کرنے میں بری طرح ناکام رہے ہیں اور ملک میں مہنگائی نے عام آدمی کو پریشان کر رکھا ہے ۔ کے ٹی آر نے ٹی آر ایس بھون میں انیل یادو ( عادل آباد ) کو پارٹی میں شامل کرنے کے بعد خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مودی عوام کا اعتماد کھوچکے ہیںاور یہی حال کانگریس کا بھی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس لوک سبھا انتخابات میں 16 حلقوں سے کامیابی حاصل کرنے کے بعد بادشاہ گر کے موقف میں ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ مودی حکومت نے تلنگانہ کو فنڈز فراہم نہیں کئے ہیں حالانکہ نیتی آیوگ اور فینانس کمیشن نے بھی اس کی سفارش کی تھی ۔ کے ٹی آر نے کہا کہ کئی سرویز میں پتہ چل رہا ہے کہ بی جے پی کو 150 نشستیں حاصل ہونگی اور کانگریس کو 100 کے آس پاس نشستیںحاصل ہونگی ۔ اگر یہ دونوں جماعتیں ایک جگہ آجائیں تب بھی حکومت نہیں بنا پائیں گی ۔ انہوں نے کہا کہ عوام کو اچہئے کہ وہ ٹی آر ایس کی تائید کریں تاکہ تلنگانہ کو ترقی دی جاسکے ۔ انہوں نے کہا کہ 16 ارکان پارلیمنٹ کے ساتھ کے چندر شیکھر راو اس موقف میں ہونگے کہ سیاسی جماعتوں کو وزیر اعظم کے انتخاب پر مجبور کرسکیں۔ اس سے ہمیں ریاست کیلئے اضافی فنڈز حاصل کرنے میں مدد ملے گی ۔

TOPPOPULARRECENT