Wednesday , December 11 2019

ورلڈکپ میں بھی آئی پی ایل پلے آف جیسی سہولت ہو

مانچسٹر ۔11جولائی (سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان ویراٹ کوہلی نے اعتراف کیا کہ ان کی ٹیم نے 45 منٹ کی ناقص کرکٹ کی قیمت ادا کی اور ورلڈ کپ سے باہر ہوگئی۔اولڈ ٹریفوڑد میں کھیلے پہلے سیمی فائنل میں نیوزی نے ہندوستان کو سنسنی خیز مقابلے کے بعد 18 رنز سے شکست دی ہے۔240 رنز کے ہدف کے تعاقب میں دو مرتبہ کی عالمی چمپئن ٹیم ہندوستان آغاز سے ہی مشکلات کا شکار رہی اور پوری ٹیم 221 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔میچ کے بعد کوہلی نے کہا کہ ہم نے پورے ٹورنمنٹ میں بہترین کرکٹ کھیلی، اس لیے صرف 45 منٹ کی بری کرکٹ کی وجہ سے میگا ایونٹ سے باہر ہوجانا افسوس کی بات ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سے آپ کا دل بھی دْکھی ہوتا ہے کیونکہ آپ نے بہترین کھیل پیش کرنے کے لیے پورے ٹورنمنٹ میں بہت محنت کی ،آپ پوائنٹس ٹیبل پر پہلے نمبر پر رہے اور پھر تھوڑی دیر کی بری کرکٹ سے آپ ٹورنمنٹ سے باہر ہوگئے۔کپتان نے کہا کہ نیوزی لینڈ کی ٹیم بہت زیادہ شاباشی کی حقدار ہے کیونکہ انہوں نے بھرپور انداز میں یہ دکھایا کہ نئی بال سے کیسے بولنگ کی جاتی ہے، انہوں نے بہترین لائن اور لینتھ پر بولنگ کی اور ہمیں غلطیاں کرنے پر مجبور کیا۔ دوسرے دن صبح ہمیں فیلڈ میں جس چیز کی ضرورت تھی ہمیں وہ حاصل ہوئی اور ہم نے سوچا کہ ہم نے نیوزی لینڈ کو اتنے اسکور تک محدود کردیا ہے جس کا کسی بھی طرح کی پِچ پر تعاقب کیا جاسکتا ہے، لیکن پہلے نصف گھنٹے میں انہوں نے جس طرح کی بولنگ کی اس نے کھیل میں فرق واضح کردیا۔ کوہلی نے کہا کہ ورلڈ کپ سے باہر ہونے کے بعد ہم دْکھی ضرور ہیں لیکن حوصلے پست نہیں ہوئے، کیونکہ اس ٹورنمنٹ میں ہم نے جس طرح کی کرکٹ کھیلی ہم جانتے ہیں کہ بطور ٹیم ہم کہاں کھڑے ہیں۔ کوہلی سے جب استفسار کیا گیا کہ کیا مستقبل میں ورلڈ کپ کا ناک آوٹ مرحلے کو آئی پی ایل کی طرز پر پلے آف کردینا چاہئے تو انہوں نے کہا مستقبل میں کیا ہوگا یہ کوئی نہیں جانتا لیکن جب ٹیموں کے جدول میں کسی کو پہلا مقام ملتا ہے تو آسانی بھی ہونی چاہئے اور آئی پی ایل کے پلے آف کی طرح قواعد پر غور ہونا چاہئے ۔واضح رہے کہ 92 رنز پر 6 کھلاڑیوں کے پویلین لوٹنے کے بعد ہندوستان پر شرمناک شکست کے سائے واضح ہوتے جارہے تھے، لیکن مہندر سنگھ دھونی اور رویندرا جڈیجہ کے درمیان 116 رنز کی شراکت نے ٹیم کے فائنل تک رسائی کے امکانات روشن کر دیئے تھے، جبکہ جڈیجہ نے شاندار بیٹنگ کرتے ہوئے اپنی نصف سنچری بھی بنائی۔ جڈیجہ کے آؤٹ ہونے کے کچھ ہی دیر بعد 50 رنز بنانے والے دھونی بھی رن آؤٹ ہوئے جس کے بعد ہندوستانی کی کامیابی کی امیدیں پوری طرح ماند پڑگئیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT