آج کسان جنتر منتر پر احتجاجی مظاہرہ کریں گے، دہلی حکومت نے دی اجازت

,

   

نئی دہلی:متحدہ کسان مورچہ نے پریس ریلیز جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ کسان پارلیمنٹ میں مانسون سیشن کے چلتے جنتر منتر پر احتجاجی مظاہرہ کریں گے ،کسان مورچہ کا دعوی ہے کہ ہندوستان کی مختلف ریاستوں کے کسان بڑی تعداد میں بسوں کے ذریعے دہلی پہنچ رہے ہیں۔دہلی کی کیجریوال حکومت نے باضابطہ حکم جاری کیا ہے۔ 22 جولائی سے 9 اگست صبح 11 بجے سے شام 5:00 بجے تک متحدہ کسان مورچہ کے زیادہ سے زیادہ 200 مظاہرین کو نین کے ساتھ مظاہرے کی اجازت دی گئی ہے۔واضح رہے کہ اس وقت دہلی میں ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایکٹ نافذ ہے ، جس کی وجہ سے ڈی ڈی ایم اے کی ہدایت نامے کے تحت کوئی اجتماع نہیں ہوسکتا ہے لیکن کسانوں کی نقل و حرکت کے لئے دہلی حکومت نے ہدایات میں خصوصی ترمیم کرکے اجازت دے دی ہے۔ملی اطلاعات کے مطابق آئی این ایل ڈی رہنما اور ہریانہ کے سابق وزیر اعلیٰ اوم پرکاش چوٹالا نے کہا کہ وہ کل پارلیمنٹ کا گھیراؤ کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ وہ کل دہلی میں دھرنا دیں گے اور سب مل کر پارلیمنٹ میں جاکر کالے قانون کی سخت مخالفت کریں گے۔ اور ہم سب مل کر حکومت کو قانون واپس لینے پر مجبور کریں گے۔