Wednesday , January 22 2020

لکھنو میں نابالغ کی عصمت ریزی‘ خودکشی کی کوشش

لکھنو۔ایک نابالغ لڑکی جس کو اس کے پڑوسی گونگی اور بہری ماں کے سامنے ہفتہ کی دوبارہ مبینہ طور پر اپنی درندگی کانشانہ بنایا ہے‘ اتوا ر کے روز زہر پی کر خودکشی کی کوشش کی‘ پولیس نے اس بات کی جانکاری دی ہے۔

کنگ جارج میڈیکل یونیورسٹی اسپتال میں زیر علاج لڑکی کی حالت بتائی جارہی ہے کہ مستحکم ہے۔

لڑکی کے والد کی جانب سے درج ایف ائی آر کے مطابق حملہ ہفتہ کی دوپہر میں اس وقت ہوا جب والد کسی کام سے باہر گیا تھا اور والدہ گھر کی چھت پر تھی۔ ایک خانگی کمپنی کے ملازم32سالہ سرویش راوت‘ جس کے تین بچے ہیں‘ان کے گھر میں داخل ہوا اور لڑکی کو پکڑا لیا۔

جب اس نے لڑکی کو پکڑا اسی وقت کمرے میں والدہ پہنچ گئی اور لڑکی کو بچانے کی کوشش کی۔

راوت نے متاثرہ کی والدہ کو دھکا دیا اور پیٹا۔ اس کے علاوہ لڑکی کی مبینہ عصمت ریزی کی اور لڑکی کو سنگین نتائج کا انتباہ دے کر چھوڑ دیا۔

لڑکی کے والدنے کہاکہ پولیس کا رویہ ان کے تئیں قابل تشویش ہے شکایت اور ایف ائی آر میں تبدیل کرنے کے لئے گھنٹوں لگادئے گئے۔

بالآخر پولیس نے اتوار کے روز لڑکی کی جانب سے زہر پی کر خودکشی کرنے کے بعد ملزم سرویش راوت کو گرفتار کیا اور اس پر ائی پی سی اور پی او سی ایس او ایکٹ کے تحت دفعات درج کئے۔

ایس ایچ او وپن کمار سنگھ نے کہاکہ راوت کے خلاف عصمت ریزی کا ایک مقدمہ درج کیاہے۔

انہوں نے مزیدکہاکہ”کافی تلاش کے بعد اس کو گرفتار کرلیاگیا ہیاور پی او سی ایس او ایکٹ کے تحت بالغ سے عصمت ریزی کا مقدمہ درج کیاگیاہے۔

اس کا علاج کیاجارہا ہے اوراس کی طبی جانچ بھی کرائی جائے گی“

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT