چین کے کیمیائی پلانٹ میں دھماکہ، 47 افراد ہلاک

بیجنگ 24 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) مشرقی چین میں کیمیکل پلانٹ میں بڑے دھماکے کے نتیجے میں کم از کم 47افراد ہلاک اور 600 سے زائد زخمی ہو گئے۔ کومت نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ ین چینگ کے صنعتی علاقے میں ہونے والے دھماکے کے نتیجے میں زخمی ہونے والے 600 سے زائد افراد کو ہسپتالوں میں طبی امداد فراہم کی جا رہی ہے۔ بتدائی طور پر بتایا گیا تھا کہ دھماکے کے نتیجے میں 12 افراد ہلاک اور 30 زخمی ہوئے ہیں لیکن بعدازاں 47 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کردی گئی۔ خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق زخمی ہونے والے 600 سے زائد افراد میں سے کم از کم 90 کی حالت نازک ہے۔ ہ دھماکا اتنا شدید تھا کہ اس سے زلزلے کا گمان ہوا اور اس نے قریبی عمارتوں کو ہلا کر رکھ دیا اور کئی کلومیٹر دور تک عمارتوں کے شیشے ٹوٹ گئے۔ 60سالہ مقامی خاتون ڑیانگ نے کہا کہ ہم جانتے ہیں ایک دن ہم سب ختم ہو جائیں گے اور وہ کافی عرصے قبل ہی علاقے میں آلودگی اور حفاظت سے متعلق اپنے تحفظات کا اظہار کر چکی ہیں۔ کام کے مطابق واقعے کے بعد سیکڑوں ریسکیو اہلکاروں کو طلب کر لیا گیا جنہوں نے موقع پر موجود 3 ہزار سے زائد افراد کو محفوظ مقامات تک پہنچایا۔ ھماکے کے بعد تین کیمیکل ٹینکس اور دیگر پانچ علاقوں میں آگ لگ گئی تھی جسے فائر فائٹرز نے رات بھر کی جدوجہد کے بعد بجھا دیا ہے۔ حکام حادثے کی وجہ جاننے کے لیے تحقیقات کر رہے ہیں اور اس سلسلے میں بڑی تعداد میں افراد کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔ س کیمیلکل پلانٹ میں دھماکا ہوا وہ تیان جیائی کمیکل کی ہے جو 2007 میں قائم ہوئی تھی۔ عہدیداروں کے مطابق یہ کمپنی آتش گیر مواد کی حامل خام مال پیدا کرتی ہے۔ ھماکے کی شدت اتنی زیادہ تھی کہ 4 کلومیٹر دور تک گھروں کی کھڑکیاں ٹوٹ گئیں اور دروازوں میں دراڑیں پڑگئیں جبکہ کچھ لوگوں زلزلے کے خوف سے اپنے گھروں سے باہر آ گئے۔ نعتوں اور کارخانوں میں حادثوں کے سلسلے میں چین کا شمار دنیا کے بدترین ممالک میں ہوتا ہے جہاں اکثر صنعتوں میں اس طرح کے جان لیوا واقعات رونما ہوتے رہتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT