کمسن لڑکے کا جنسی استحصال پر دو نوجوان گرفتار

اے سی پی فلک نما عبدالرشید کی پریس کانفرنس
حیدرآباد ۔ 19 جنوری (سیاست نیوز) کمسن لڑکے کا جنسی استحصال کرنے والے دو افراد کو پولیس نے گرفتار کرلیا۔ یاد رہیکہ لڑکے کی والدہ کی شکایت پر پولیس نے حرکت میں آتے ہوئے ان دو بدمعاش نوجوانوں کو گرفتار کرلیا اور انہیں عدالتی تحویل میں دیدیا۔ اسسٹنٹ کمشنر آف پولیس فلک نما مسٹر عبدالرشید نے ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ غازی ملت کالونی علاقہ کے ساکنان 22 سالہ مطلب اور 19 سالہ مدثر کو گرفتار کرلیا۔ 16 جنوری کی رات 11 سالہ کمسن لڑکا جو اس کے گھر کے سامنے کھیل رہا تھا کہ اچانک غائب ہوگیا اور رات تقریباً 11 بجے نمودار ہوا۔ اس لڑکے نے اس پر ہوئے جنسی حملہ اور اس کے ساتھ بدفعلی کے واقعہ کی تفصیلات سے اس کی والدہ کو واقف کروایا۔ اس پریشان حال خاتون نے پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کروائی جس پر پولیس ان دونوں کو حراست میں لیکر پوچھ تاچھ کی اور جرم کے ارتکاب کے بعد انہیں عدالتی تحویل میں دے دیا گیا۔ اے سی پی فلک نما مسٹر عبدالرشید نے بتایا کہ جرم کرنے کے بعد دونوں فرار ہوگئے تھے۔ پولیس نے مقامی طور پر پوچھ گچھ کی اور پولیس کو ابتدائی تحقیقات میں اس بات کا پتہ چلا کہ دو افراد نے اس کمسن لڑکے کو ریلوے اسٹیشن کے قریب سنسان علاقہ میں لے گئے تھے جنہیں پولیس نے بالاپور کے علاقہ میں گرفتار کرلیا۔ اے سی پی نے بتایا کہ ملزمین نے متاثرہ لڑکے کو فروٹی بھی دلائی اور دھمکایا کہ وہ اس بات کا ذکر کسی سے نہ کرے۔ پولیس نے گرفتار افراد کو عدالتی تحویل میں دیدیا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT