Sunday , February 23 2020

اکھلیش یادو نے شاہین باغ کے مظاہرین کا موازنہ رانی لکشمی بائی سے کیا

لکھنؤ: شاہین باغ مظاہرین پر اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کے تبصرے کی مذمت کرتے ہوئے سماج وادی پارٹی (ایس پی) کے سربراہ اکھلیش یادو نے جمعرات کو ترمیم شدہ شہریت ایکٹ کے خلاف احتجاج کرنے والی خواتین کا موازنہ جھانسی کی رانی لکشمی بائی سے کیا۔

اکھلیش یادو نے پریس کانفرنس میں کہا کہ بی جے پی رہنما خواتین مخالف بیانات جاری رکھے ہوئےہیں۔ شاہین باغ اور دیگر مقامات پر خواتین مظاہرین کے خلاف اترپردیش کے وزیر اعلی کی جانب سے جاری کردہ بیانات قابل اعتراض ہیں۔ اسے یہ معلوم ہونا چاہئے کہ جھانسی کی رانی لکشمی بائی بھی خود اعتمادی کے تحفظ کے لئے انگریزوں کے خلاف لڑنے کے لئے کھڑی ہوئی تھیں۔ آج خواتین بھی اپنی عزت نفس کو بچانے کے لئے احتجاج کرنے آئی ہیں۔

سابق وزیر اعلی نے کنوج اور فرخ آباد میں کئی پروگراموں میں حصہ لیا۔

اکھلیش یادو نے یوپی کے موجودہ وزیر اعلی کا بطور سنت کا ذکر کرتے ہوئے مزید کہاکہ”ایک سنت کی زبان اور جذبات اس کے قد کے مطابق ہونا چاہئے۔ وزیراعلیٰ کا کہنا ہے کہ ، ‘ٹھک کرو’ ، ‘بدلہ لینگے’ یہ الفاظ انہیں زیب نہیں دیتے۔

اب انہوں نے خواتین کو ان کے کنبہ کے ممبروں کو ہر چوراہے پر احتجاج میں بیٹھنے پر مجبور کیا ہے۔ یہ ایک بہت بڑا جرم ہے کیونکہ مرد ارکان اپنے گھروں کے اندر بیٹھ کر کمبل کے نیچے سو رہے ہیں جبکہ خواتین کو احتجاج کرنے پر مجبور کیا گیا ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT