پہاڑی شریف میں نوجوان لڑکی کی مشتبہ موت

جسم پر زخم کے نشانات، تدفین سے عین قبل پولیس کو اطلاع

حیدرآباد 13 اپریل (سیاست نیوز) شہر کے نواحی علاقہ پہاڑی شریف میں ایک نوجوان لڑکی کی مشتبہ موت کا واقعہ پیش آیا۔ بتایا جاتا ہے کہ 25 سالہ ریشماں بیگم جو پہاڑی شریف کے علاقہ وادیٔ مصطفی کے ساکن محمد فاروق کی بیٹی تھی، یہ لڑکی آج صبح اپنے مکان میں مردہ دستیاب ہوئی۔ اس واقعہ پر لڑکی کی بہن کے بیانات اور سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی خبر سے شبہات ظاہر کئے جارہے تھے۔ چونکہ مکان میں لڑکی کے علاوہ ان کے والد اور بھائی رہتا تھا۔ اس لڑکی کے جسم پر زخموں کے نشانات کو دیکھتے ہوئے عین تدفین سے قبل پولیس کو اطلاع دی گئی۔ پہاڑی شریف پولیس ذرائع کے مطابق محمد فاروق کی شکایت پر پولیس نے مقدمہ درج کرلیا ہے۔ تاہم فاروق کی شکایت میں حیرت انگیز انکشاف کیا گیا۔ متوفی لڑکی ریشماں بیگم ذہنی طور پر کمزور اور خرابی صحت سے جوج رہی تھی۔ اس لڑکی کے علاج کی خاطر لڑکی کی والدہ بیرون ملک خدامہ کی حیثیت سے کام کررہی تھی تاکہ لڑکی کے علاج کے اخراجات کو پورا کیا جاسکے۔ لڑکی کا علاج کرنے کی غرض سے لڑکی کے والد نے ایک مرشد (عامل) محمد نعیم سے رجوع ہوا اور لڑکی کو اسی عامل کے یہاں علاج کروایا۔ نعیم نے لڑکی کو کچھ دوا دی اور استعمال کرنے کا مشورہ دیتے ہوئے گھر روانہ کردیا۔ یہ واقعہ لڑکی کے والد نے پولیس میں دیئے گئے بیان میں شکایت میں بیان کیا ہے۔ کل رات لڑکی روزانہ کے معمول کی طرح سوگئی لیکن صبح وہ مردہ دستیاب ہوئی۔ اس کے جسم پر خراش کے نشانات پائے گئے۔ پولیس پہاڑی شریف نے اس سلسلہ میں مقدمہ درج کرلیا ہے اور مصروف تحقیقات ہے۔

TOPPOPULARRECENT