Saturday , October 19 2019

سی بی آئی اور مودی حکومت کے خلاف ممتا بنرجی کا دھرنا

مغربی بنگلا کل شام سے سیاسی جنگ کا میدان بنا ہوا ہے اور وہاں پر زبردست سیاسی ڈرامہ جاری ہے ۔ ویزر اعلی ممتا بنرجی دھرنے پر بیٹھی ہوئی ہیں اور ان کے وزراء اور ارکان اسمبلی بھی ان کے ساتھ موجود ہیں ۔ ادھر ذرائع کے مطابق سی بی آئی اور ریاستی حکومت کا اگلا قدم سپریم کورٹ کا دروازہ کھٹ اور کھٹانا ہوگا۔ ادھر ترنمول کانگریس کے کارکنان نے مرکز اور مودی کے خلاف ریل روکو مہم شروع کر دی ہے۔

کولکاتا میں کل اس وقت انتہائی سنگین صورتحال پیدا ہو گئی جب مغربی بنگال کی وزیر اعلی ممتا بنرجی مرکز کے خلاف سڑک پر آ کر دھرنے پر بیٹھ گئی ہیں ۔ بی جے پی اور ترنمول کانگریس پارٹی دونوں ایک دوسرے پر الزامات لگا رہی ہیں لیکن جو کولکاتا میں دیکھنے میں آیا ویسا ملک میں پہلی مرتبہ سامنے آیا ہے ۔ ممتا بنرجی شہر کے پولس کمشنر کی رہائش گاہ پر سی بی آئی کے چھاپہ مارنے کی کوشش کے خلاف احتجاج میں دھرنا پر بیٹھی ہیں۔ ممتا بنرجی نے صاف کہا ہے کہ کیونکہ وہ مودی حکومت کے خلاف حزب اختلاف کو متحد کرنے میں پیش پیش ہیں اس لئے مودی اور شاہ کی جوڑی ان کی حکومت کے خلاف سی بی آئی کا استعمال کر رہی ہے۔

ممتا بنرجی سے یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے کانگریس صدر راہل گاندھی نے ان سے فون پر بات کرنے کے بعد ٹوئٹ کیا ’’مغربی بنگال میں جو کچھ ہو رہا ہے وہ مودی اور بی جے پی کے ذریعہ ہندوستان کے آئینی اداروں پر مسلسل حملہ کا حصہ ہے۔‘‘ انھوں نے کہا کہ پورا حزب اختلاف ملکر ان فسطائی طاقتوں کو شکست دے گا ۔

ترنمول کانگریس نے الزام لگایا ہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی اپنے مخالفین کے خلاف مرکزی جانچ بیور(سی بی آئی) کا ناجائز استعمال کررہی ہے اور اتوار کو کولکاتہ میں پولس کمشنر کے خلاف بھی اس نے یہی کام کیا۔ راجیہ سبھا میں پارٹی کے لیڈر ڈیرک اوبرائن نے آج رات صحافیوں کو بتایا کہ مغربی بنگال کی وزیراعلی ممتا بنرجی کولکاتا پولس کمشنر راجیو کمار پر سی بی آئی کے چھاپہ کے خلاف دھرنے پر بیٹھ گئی ہیں۔ اوبرائن نے کہا کہ مودی حکومت سبھی اپوزیشن سیاسی پارٹیوں کے خلاف سی بی آئی کا استعمال کرکے انھیں ڈرا دھمکا رہی ہے۔ انھوں نے الزام لگایا کہ وزیر اعظم نریندرمودی کے دفتر میں سبھی آئینی اداروں کی حیثیت میں کمی کی گئی ہے۔ اس لیے مودی اور امت شاہ کی جوڑی کو ہٹانا بے حد ضروری ہے۔ انھوں نے کہا کہ سبھی اپوزیشن پارٹیاں متحد ہوکر مودی بھگانے کے لیے کام کریں گی اور پارلیمنٹ کے اندر احتجاج کریں گی۔

اس معاملہ میں حزب اختلاف کے تمام سینئر رہنما ممتا کے ساتھ کھڑے نظر آ رہے ہیں اور سبھی یکجہتی کا اظہار کر رہے ہیں۔

واضح رہے کل شام مرکزی تفتیشی بیورو(سی بی آئی) کے چندافسران کو لکاتا وہاں کے پولیس کمشنر راجیو کمار سے پوچھ تاچھ کرنے کے لئے پہنچے تھے ۔ ان افسران کو پہلے وہاں کی مقامی پولیس نے گرفتار کر لای جبکہ بعد میں انہیں رہا بھی کر دیا گیا ۔ سی بی آئی کے 40 افسران آج شام کولکاتا پولس کمشنر راجیو کمار کے گھر لوڈن اسٹیٹ پہنچے تھے۔ اس کے فورا بعد کولکاتا پولس کے افسران راجیو کمار کے گھر پہنچ گئے اور سی بی آئی کے افسران کو حراست میں لے کر شیکسپئر سرانی پولس اسٹیشن لے گئے۔ پہلے کولکاتا پولس کی جانب سے کہا گیا تھا کہ مرکزی جانچ ایجنسی کے پانچ افسران کوگرفتار کرلیا گیا تھا۔

دوسری جانب مرکزی حکومت نے کہا تھا کہ ممتا بنرجی حکومت آئینی بحران پیدا کررہی ہے۔سی بی آئی نے الزام عاید کیا ہے کہ کولکاتا پولس کے افسران نے کولکاتا میں واقع سی بی آئی کے دونوں دفاتر کا محاصر ہ کرلیا ہے۔سی بی آئی نے کہا تھا کہ کولکاتا پولیس اس کیس میں شواہد کوبرباد کرسکتی ہے۔ دوسری جانب ممتا بینرجی اور ترنمول کانگریس کے رہنماؤں نے کہا کہ ان سی بی آئی افسران کے پاس پوچھ تاچھ کرنے کے لئے کوئی دستاویز نہیں تھا اور یہ سب سیاسی ہتھکنڈا ہے ۔

کولکاتا پولس کمشنر راجیو کمار کو چٹ فنڈ گھپلہ معاملے میں سی بی آئی کے ذریعہ گرفتار کرنے کی کوششوں پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے وزیرا علیٰ ممتا بنرجی دھرم تلہ میں واقع میٹرو چینل پر دھرنے پر بیٹھ گئی ہیں۔ وزیرا علیٰ نے کہا کہ وہ جمہوریت کو بچانے کے لئے یہ دھرنا دے رہی ہیں۔ خیال رہے کہ 13سال قبل ممتا بنرجی نے اسی جگہ پر یکم دسمبر 2006 کو بنگال میں حصول اراضی کے خلاف طویل ترین 26 دن بھوک ہڑتال پر بیٹھی تھیں۔ اسی دھرنے کے بعد ہی ممتا بنرجی بنگال میں مقبول ہوئی تھیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT