Wednesday , January 22 2020

کانگریس کی رکن پارلیمان الکا لمبا نے بحث دوران میڈیاء کو دکھایا آئینہ

حیدرآباد میں پچھلے دنوں جو انسانیت سوز واقعہ پیش آیا ہے ملک بھر کے لوگوں میں ایک سوال اٹھ رہا کہ حکومت ان واقعات پر دھیان دینے کے بجائے لوگوں کو بھٹکانے والے اور غیر آئینی کام کر رہی ہے۔

کل آج تک ٹی وی چینل میں حیدرآباد کے واقعے پر ہی بحث ہو رہی تھی۔

کانگریس کی رکن پارلیمان جرات مندانہ طریقہ انکے ہی اسٹوڈیو میں انہیں آئینہ دکھایا، اینکر آنجنہ اومکشب نے انہیں روکنے کی کوشش کی مگر وہ اپنی بات مکمل کرکے ہی “شیم شیم“ کہتے ہوئے بحث چھوڑ کر چلی گئی۔

انہوں نے کہا کہ آپ کی حکومت ملزموں کو بیماری کے بہانے ہسپتال میں بھیج دیتی۔

کانگریس نے اپنے کے غلط رویوں کی وجہ سے آپ کے چینلز پر ترجمان بھیجنے بند کردیے ہیں، میں بحیثیت ایک عورت ائی ہوں، 25 سال سے سیاست میں ہوں۔

انہوں نے کہا کہ 45% فیصد عورتوں کی عزت لٹنے والے ملزموں کو بی جے پی نے ٹکٹ دیا اور عوام نے ووٹ دیا آج وہ ملک کی پارلیمنٹ ہیں۔

انہوں نے اناو کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ اس نے اپنے کو بچانے کےلیے متاثرہ کا اکسیڈنٹ کروایا، مگر آج وہ لڑکی جیل میں ہے اور صاحب ہسپتال میں، چنمیانند سابق مرکزی وزیر بی جے پی کے ریپ کیا وہ بھی ہسپتال میں ہیں مگر متاثرہ جیل میں ہے۔

لعنت ہے ایسے قانون، ایسی پارٹی، ایسے اراکین پارلیمنٹ اور ایسی عوام پر جنہوں نے انکو ووٹ دے کر ہمارے سر پر بٹھا دیا۔

انہوں نے کہا کہ خون کھولتا ہے مگر اصل چیز سے ہٹا دیا جا رہا ہے،۔

اس بات پر انکو اینکر نے روکا۔۔

تو وہ ”شیم ان یو آج تک“ اور شیم ان یو انجنہ کہتے ہوئے چلی گئیں۔

انہوں یہ بھی کہا میرا بھی 22 سالہ بیٹا ہے اسے میں نے تہذیب سکھائی ہے اگر وہ بھی کسی لڑکی کی طرف انکھ اٹھا کر دیکھے گا تو میں اسے سب سے پہلے سزا دوں گی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT